ہائی کورٹ کے فیصلہ کو میری جیت یا کیجری وال کی شکست کی نظر سے نہ دیکھا جائے: نجیب جنگ

نئی دہلی: دہلی کے لیفٹیننٹ گورنر نجیب جنگ نے دہلی ہائی کورٹ کے فیصلے کے حوالے سے کہا ہے کہ اسے ان کی جیت یا وزیر اعلی اروند کیجریوال کی شکست کے طور پر نہیں دیکھا جانا چاہیے۔ مسٹر جنگ نے اختیارات کے تعلق سے دہلی ہائی کورٹ کے فیصلے کو اہم اور تاریخی بتاتے ہوئے کہا کہ اس پر ایک سال تک بحث جاری رہی۔
یہ آئین کی ساکھ کا سوال تھا اور انہوں نے آئین کی روح اور برسوں سے چلی آ رہی روایت کا احترام کرتے ہوئے کام کیا۔ انہوں نے کہا کہ لیفٹیننٹ گورنر کی رہائش گاہ میں رہ کر انہوں نے آئین کے دائرے میں رہ کر ہی کام کیا ہے اور حکومت کے کام کاج میں رکاوٹ نہ ڈالتے ہوئے غلط اقدامات کو درست کرنے پر زور دیا۔ دہلی ہائی کورٹ کے فیصلے کے بعد اب تمام چیزیں واضح ہو گئیں ہیں۔
انہوں نے کہا کہ وہ یہاں صدر جمہوریہ کانمائندہ ہیں اور آئین کے دائرے میں رہ کر کام کرنا ان کا فرض ہے۔ دہلی حکومت کے یہ کہنے پر کہ وہ اکثریت سے منتخب ہوئی حکومت ہے اور انہیں کام نہیں کرنے دیا جا رہا ہے،مسٹر جنگ نے کہا کہ دہلی مرکز کازیر انتظام علاقہ ہے۔ یہاں سات ارکان پارلیمان بھی منتخب ہو کر آئے ہیں اور کارپوریشنوں میں بھی منتخب حکومت ہے۔ اختیارات کے بارے میں ہم عدالت نہیں گئے۔
ہم نے تو صرف عدالت میں قانون پڑھ کر بتایا اور کہا کہ دہلی حکومت نے جہاں آئین کی خلاف ورزی کر کے کام کیا، اسی پر سوال کھڑے کئے۔ 21 ممبران اسمبلی کے پارلیمانی سیکرٹری مقرر کئے جانے کے مسئلے پر پوچھے گئے سوال کے سلسلے میں مسٹر جنگ نے کہا کہ ان سے اس سلسلے میں کوئی رائے نہیں لی گئی اور اب یہ معاملہ الیکشن کمیشن میں ہے، تو اس سلسلے میں وہ کچھ نہیں کہہ سکتے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Delhi hc ruling not a victory for me nor a defeat for kejriwal lg jung in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply