اضافی سواری بٹھانے سے انکار پر افریقیوں نے دہلی میں کیب ڈرائیور کو بری طرح مارا پیٹا

نئی دہلی: قومی دارالخلافہ دہلی میں افریقی نژاد باشندوں پر حملوں کے واقعات کے درمیان پیر کو علی الصباح افریقیوں کے ایک گروپ نے دہلی کے مہرولی علاقہ میں اس وقت ایک کیب ڈرائیور کو زدو کوب کر کے بری طرح زخمی کر دیا جب اس نے اپنی ٹیکسی میں اضافی سواریوں کو بٹھانے سے انکار کر دیا۔
پولس کے مطابق 51 سالہ کیب ڈرائیور کوجس کی شناخت نور الدین کے طور پر ہوئی ہے ، چہرے پر چوٹوں کے ساتھ آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (ایمس) لے جایا گیا جہاں اس کے چہرے پر چھ ٹانکے لگائے گئے۔اس کے منھ پر اس قد ر گھونسے برسائے گئے تھے کہ اس کی بائیں آنکھ اور گال پر سوجن آ گئی ۔
پولس کے ایک افسر بالا نے بتایا کہ چونکہ چھ افریقی جن میں چار مرد اور دو خواتین تھیں کیب میں سوار ہونا چاہتے تھے لیکن ڈراﺅیر نے کہا کہ وہ چار سے زیادہ سواریاں نہیں بٹھائے گاکیونکہ چار سے زیادہ سواریاں بٹھانے پر پابندی ہے۔ جس پر افریقی باشندے بھڑک اٹھے اور انہوں نے نور الدین کو پیٹ ڈالا۔

Title: delhi cabbie beaten up by african nationals for refusing extra passengers | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply