متھرا میں پولس اور عوام کے درمیان تصادم میں ہلاک شدگان کی تعداد بڑھ کر24ہو گئی،40زخمی

متھرا: جمعرات کی شام میں یہاں کے ایک پارک سے غیر قانونی قبضے ختم کرنے کے لیے پہنچی پولس اور مقامی رہائشیوں کے درمیان ہونے والے تصادم میں ایک پولس سپرنٹنڈنٹ اور ایک ایس ایچ او سمیت تقریباً 24افراد ہلاک اور 100 دیگرزخمی ہو گئے۔
زخمیوں میں سٹی مجسٹریٹ رام اراج یادو بھی شامل ہیں۔آگرہ کے پولس کمشنر پردیپ بھٹناگر نے ان ہلاکتوں کی تصدیق کر دی۔بتایا جاتا ہے کہ280ایکڑ رقبہ میں پھیلے جواہر باغ میں گذشتہ دو سال سے خود کو ستیہ گرہی اور سبھاش چندر بوس کے پیروکار کہنے والے 3ہزار افراد نے غیر قانونی طور پر قبضہ کر رکھا تھا۔
یہ لوگ آئے روز جھگڑے فساد مین بھی ملوث رہا کرتے تھے۔جب حکام نے جمعرات کو اس غیر قانونی قبضہ کے خلاف کارروائیکی تو قابضین نے مزاحمت کی اور پولس پر فائرنگ شروع کر دی۔ متھرا کے پولس سپرنٹندنٹ مکل دیویدی اورفرح تھانہ کے ایس ایچ او سنتوش یادوجو اس تصادم میں شدید زخمی ہو گئے تھے زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ گئے۔
اتر پردیش کے پولس ڈائریکٹر جنرل جاوید احمد نے کہا کہ جے بابا گوردیو فرقہ کے افراد نے بلا اشتعال فائرنگ کی۔ جس کے بعد پولس نے تشدد پر آمادہ بھیڑ کو منشر کرنے کے لیے پہلے تولاٹھی چارج کیا اسے غیر مو¿ثر پاکر آنسو گیس چھوڑی ۔
اس کا بھی کوئی اثر نہیں ہوا تب پولس کو بھی جوابی فائرنگ کرنا پڑی۔جاوید احمد نے کہا کہ صورت حال اب بھی کشیدہ ہے اور سینیئر پولس افسران کے ساتھ پولس دوستے بھیجے جارہے ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Death toll in mathura clash rises to 21 sp sho among dead in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply