وزیر اعظم کی ایوان میں عدم موجودگی پر راجیہ سبھا میں ہنگامہ ، کارروائی بدھ تک ملتوی

نئی دہلی:اپوزیشن جماعتوں کے اراکین نے نوٹ بندی کے معاملے پر بحث کے دوران وزیر اعظم نریندرمودی کی ایوان میں موجودگی کے مطالبہ پر آج بھی راجیہ سبھا میں زوردار ہنگامہ کیا جس کی وجہ سے وقفہ سوالات او روقفہ صفر نہیں ہوسکا اور ایوان کی کارروائی تیسری بار کل تک کے لئے ملتوی کردی گئی۔
لنچ کے بعد ڈپٹی چےئرمین پی جے کورین نے ایوان کی کارروائی شروع کرتے ہوئے نوٹ بندی پر بحث آگے چلانے کے لئے متعلقہ رکن کا نام پکارا تو سماج وادی پارٹی کے نریش اگروال نے ضابطہ کا سوال اٹھایا اور کہا کہ مالی بل کے نام پر ایوان کے وقار اور عزت کو مجروح کیا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس پر ایوان کی ایک کمیٹی قائم ہونی چاہئے۔
ان کی حمایت سما ج وادی پارٹی کے رام گوپال یادو، کانگریس کے پرمود تیواری، راجیو شکلا نے بھی کی۔ لیکن مسٹر کورین نے کہا کہ ایوان میں کمیٹی کی تشکیل کی جاسکتی ہے اور انہیں اس کے لئے نوٹس دینا چاہئے۔ اس کے بعد ڈپٹی چےئرمین نے ایوان کی نوٹ بندی پر بحث کے لئے رکن کا نام پکارا تو کانگریس کے رکن” وزیر اعظم ایوان میں حاضر ہوں “کے نعرے لگاتے ہوئے چےئرمین کی نشست کی طرف بڑھنے لگے۔ ایوان میں شور شرابہ ہونے لگا۔
مسٹر کورین نے اراکین کو پرسکون رہنے کی اپیل کی اور کہا کہ ایوان کے لیڈر نے یقین دہانی کرائی ہے کہ نوٹ بندی پر بحث کے دوران وزیر اعظم ایوان میں آئیں گے اور مداخلت کریں گے۔ اس لئے اپوزیشن کو بحث شروع کرنی چاہئے لیکن دونوں فریقین نے ان کی بات نہیں سنی اور نعرے بازی کرتے رہے۔ بالآخر انہیں ایوان میں کارروائی تیسری مرتبہ دن بھر کے لئے ملتوی کردی۔ اس سے پہلے ایوان میں اسی معاملے پر ہنگامہ کی وجہ سے وقفہ سوالات اور وقفہ صفر نہیں ہوسکا تھا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Deadlock over pm modis presence in rajya sabha continues in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply