داؤد ابراہیم ہندوستان واپس آنا چاہتا ہے: وکیل نے عدالت کو مطلع کیا

ممبئی: ہندوستان کو مطلوب بھگوڑے انڈر ورلڈ ڈان داؤد ابراہیم ہندوستان واپس آنا چاہتا ہے۔ داؤد کے بھائی اقبال کاسکر کے وکیل شیام کیسوانی نے تھانے کی ایک مجسٹریٹی عدالت میں کہا کہ داؤد ابراہیم کا کہنا ہے کہ اگر اسے مقدمہ کی پوری کارروائی کے دوران آرتھر روڈ جیل میں قید رکھا جائے تو وہ ہندوستان واپس آسکتا ہے۔
واضح رہے کہ داؤد ابراہیم 1993کے بم دھماکوں میں جس میں250ے زائد افراد ہلاک ہوگئے تھے، ہندوستان کونہایت مطلوب دہشت گرد ہے۔شیام کیسوانی نے ،جو ہفتہ وصولی معاملہ میں داؤد ابراہیم کے چھوٹے بھائی اقبال کاسکر کے وکیل دفاع ہیں، کہا کہ در حقیقت داؤد نے سینیئر وکیل رام جیٹھ ملانی سے اپنا ارادہ بہت واضح الفاظ میں ظاہر کیا تھا۔ لیکن حکومت نے اس کی مشروط واپسی منظور کرنے سے انکار کر دیا۔جس کے باعث داؤد کو گرفتار نہیں کیا جاسکا۔
جس کیس کی سماعت کے دوران یہ بات سامنے آئی ہے اس میں کاسکر اور اس کے بھائیوں داؤد اور انیس پر الزام ہے کہ انہوں نے میرا روڈ کے ایک بلڈر کو دھمکیاں دی تھیں۔سماعت کے دوران جوڈیشیل مجسٹریت نے کاسکر سے مععلوم کیا کہ کیا اسے داؤد یا اپنے دیگر افراد خاندان کا کوئی اتہ پتہ معلوم ہے تو اس نے صاف منع کر دیا۔
جب یہ معلوم کیا گیا کہ کیا حال فی الحال اس کی داؤد سے کوئی ٹیلی فونی بات ہوئی ہے تو کاسکر نے تھوڑی دیر کچھ سوچا اور کہا کہ ہاں کچھ روز پہلے اس کی موبائیل فون پر اس سے بات ہوئی تھی لیکن اس کا نمبر کبھی موبائیل پر نہیں آتا اس لیے وہ یہ نہیں بتا سکتا کہ داؤد کہاں مقیم ہے۔

Title: dawood ibrahim offered to return to india if locked in arthur road jail court told | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply