اجمیر میں درگاہ دیوان کےبیٹے کو جنتی دروازے میں داخل نہیں ہونے دیا گیا،رسم قل انجمن نے ادا کی

اجمیر: یہاں خواجہ کی درگاہ میں ایک زبردست تنازعہ کھڑا ہو گیا جس کے باعث درگاہ کے دیوان کو اپنے بیٹے کے ساتھ جنتی دروزے کے باہر دھرنے پر بیٹھنا پڑا۔
اور پولس کی مداخلت کے بعد ہی اس معاملہ کو خراب رخ اختیار کرنے روکا جا سکا۔ واقعہ یوں بتایا جاتا ہے کہ درگاہ دیوان ہر سال عرس کے موقع پر ہونے والی قل کی رسم ،جسے ابھی تک درگاہ دیوان کرتے رہے ہیں،موجودہ دیوان زین العابدین نے اپنے بیٹے نصیر الدین کو اپنا وارث بنانے کا اعلان کرتے ہوئے ان سے کرانا چاہی ۔
لیکن خدام نے اس جانشینی کی شدت سے مخالفت کی اور ان کے بیٹے کو جنتی دروازے میں داخل نہیں ہونے دیا گیا۔ انجمن خدام نے دیوان کے بیٹے کو باہر نکال کر خود ہی قل کی رسم ادا کر دی۔
جس سے ناراض ہو کر دیوان زین العابدین بھی جنتی دروازے کے باہر بیٹے کے ساتھ دھرنے پر بیٹھ گئے اور رات دو بجے سے صبح 5بجے تک یہ ہنگامہ چلتا رہا۔تب پولس سپرنٹنڈنٹ اور ڈسڑکٹ مجسٹریٹ نے دیوان کو سمجھایا ۔جس کے بعد دیوان اور ان کے بیٹے وہاں سے چلے گئے اور خدام نے جنتی دروازہ کھول دیا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Dargah ajmer sharif controversy over diwan son zainul abedin in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply