فضائیہ کے ایک جوان کو کار سے کچلنے والے سابق ممبر اسمبلی کے بیٹے کی درخواست ضمانت کلکتہ ہائی کورٹ سے خارج

کولکاتا:یوم جمہوریہ کے پریڈ کیلئے13جنوری کو ریہرسل کررہے انڈین ائیر فورسیس کے ایک جوان کو ہیٹ اینڈ رن کیس میں ہلاک کرنے والے محمد سانبیا سہراب کو کلکتہ ہائی کورٹ نے ضمانت دینے سے انکار کردیا ہے۔
جسٹس انیرودھ بوس نے سامبیا کی درخو است ضمانت کور د کرتے ہوئے کہا کہ یہ بہت ہی سنگین معاملہ ہے۔ملزم دوٹریفک بلاک کو توڑ کر پریڈ کے علاقہ میں داخل ہوا اور فوجی جوان کو جو ملک و قوم کے محافظ ہوتے ہیں، ہلاک کردیا۔ جسٹس بوس نے کہا کہ جرم کی نوعیت ملزم کو ضمانت دینے کی اجازت نہیں دیتی ہے۔
چیف جسٹس منجو لاچیلور نے سانبیا سہراب کے درخواست ضمانت کو جسٹس بوس کی عدالت منتقل کر دیا تھا۔اس سے قبل ڈویڑن بنچ میں بھی سامبیا سہراب کو ضمانت کے معاملے میں اختلافات ہوگیا تھا۔جسٹس اسیم کمار رائے سانبیا سہراب کو ضمانت دینے سے انکار کردیا تھا۔جب کہ جسٹس سی ایس کرنان نے سانبیاسہراب کو ضمانت دینے کی منظوری دیدی تھی۔
اس کے بعد ہی چیف جسٹس نے اس معاملے کو جسٹس بوس کے پاس بھیج دیا تھا۔ واضح رہے کہ 13جنوری کو کلکتہ کے ریڈ روڈ پر 26جنوری کیلئے پریڈ کی ریہرسل کررہے کہ 21سالہ کارپول ابھینو کو ایک نئی آڈی کارنے کچلدیا تھا۔اس کار کو مبینہ طور پر سامنیا سہراب ہی چلارہے تھے۔
سانبیا سہراب سابق ممبر اسمبلی محمد سہراب کے بیٹے ہیں۔اس معاملے میں پولس نے محمد سہراب اور ان کے بڑے بیٹے کے خلاف بھی گرفتاری کا وارنٹ جاری کیا تھا مگر بعد میں ان دونوں کو عدالت سے ضمانت مل گئی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Court rejected bail plea of ex mlas son sambia sohrab in kolkata hit and run case in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply