کوئمبٹور بم دھماکے کا ملزم رفیق وزیر اعظم مودی کو قتل کرنے کا منصوبہ بنانے کے الزام میں بھی گرفتار ،جیل بھیجا گیا

کوئمبٹور(تمل ناڈو) : 1998کے کوئمبٹور بم دھماکہ کیس کے ایک ملزم محمد رفیق کو وزیر اعظم نریندر مودی کے قتل کی سازش رچنے کے الزام میں گرفتار کر کے 15روز کے لیے جیل بھیج دیا گیا۔ وہ پرکاش نام کے ایک تاجر سے ٹیلی فونی گفتگو میں مودی کو ہلاک کرنے کی بات کر رہا تھا۔ اس کی یہ ٹیلی فونی گفتگو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی جس میں واضح طور پر سنا گیا کہ وہ نریندر مودی کو ہلاک کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔پولس نے بتایا کہ 8منٹ طویل گفتگو ، جو سوشل میڈیا میں گردش کر رہی ہے،کوئمبٹور دھماکہ کیس میں قید کی سزا بھگتنے کے بعد شہر کے کنیا متھور میں رہائش پذیر ہے اور ٹرانسپورٹ ٹھیکیدار ہے،سوشل میڈیا پر گردش کر رہی ہے۔ابتدا میں گفتگو صرف گاڑیوں کی خریداری اور انہیں فنانس کرنے کے حوالے سے ہی ہو رہی تھی کہ اچانک ہی دھماکہ کے ملزم کو یہ کہتے سنا گیا کہ ہم نے وزیر اعظم مودی کو ہلاک کرنے کا منصوبہ اسی طرح بنا رکھا ہے جیسا ہم نے 1998میں سابق نائب وزیر اعظم لال کرشن آڈوانی کو کوئمبٹور کے دورے کے دوران ہلاک کرنے کے لیے بم نصب کرکے بنایا تھا۔ فروری1998 میں کوئمبٹور تسلسل سے ہونے والے بم دھماکوں سے گونج اٹھا تھا اور کم از کم58افراد ہلاک، درجنوں زخمی اور کروڑوں روپے کی املاک تباہ ہو گئی تھی اور100سے زائد گاڑیوں کو نقصان پہنچا تھا۔ اس وقت میرے خلاف کئی معاملات درج کیے گئے تھے۔ پولس نے ریکارڈ کی گئی اس گفتگو کی تحقیقات کے لیے خصوصی ٹیمیں تشکیل دیں اور اس میں باہم محو گفتگو افرا دکی اصلیت کی تصدیق کی ۔اورپھر اسی گفتگو کی بنیاد پر گرفتاری عمل میں لائی گئی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Conspiracy to eliminate modi coimbatore blast convict mohammed rafiq in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply