کانگریس کا وفد10نومبر کو لداخ اور کرگل کا تین روزہ دورہ کرے گا

نئی دہلی: کانگریس نے اپنے لیڈر پی چدمبرم کے”خود مختاری“ ریمارکس کو کوئی خاص اہمیت نہ دینے کی کوشش کرتے ہوئے ایک بیان میں کہا ہے کہ گذشتہ ماہ ڈاکٹر منموہن سنگھ کی قیادت میں کانگریس کا جو وفد کشمیر گیا تھا وہ 10نومبر کو لداخ اور کرگل کا تین روزہ دورہ کرے گا۔
بیان میں کہا گیا ہے کہ دورہ مکمل کرنے کے بعد یہ وفد کانگریس صدر کو اپنی رائے اور تجربات گوش گذار کرے گا۔بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ اس ضمن میں انفرادی رائے مختلف ہو سکتی ہے لیکن مجموعی طور پر انڈین نیشنل کانگریس اس امر میں یقین رکھتی ہے کہ جموں و کشمیر میں پائیدار امن و خوشحالی آئین ہند کی حدود میں رہ کرکام کرنے میں مضمر ہے۔
واضح رہے کہ ہفتہ کے روز گجرات کے راجکوٹ میں ایک صحافی نے یو پی اے کے سابق وزیر مالیات اور کانگریس رہنما پی چدمبرم سے پوچھا تھا کہ کیا وہ اب بھی کشمیر کے لیے زیادہ خود مختاری کے حق میں ہیں۔جس پر انہوں نے کہا تھا کہ وادی کشمیر میں جو مطالبہ ہے وہ دفعہ370پر من و عن عمل کرنے کا ہے۔جس کا مقصد زیادہ خودمختاری دینا ہے۔
جموں و کشمیر میں لوگوں سے بات کر کے مین جو نتیجہ اخذ کیا وہ یہ ہے کہ جب کشمیری آزادی کا مطالبہ کرتے ہیں،میں سارے کشمیری نہیں بلکہ زیادہ تر کہہ رہا ہوں،تو اس میں اکثریت خود مختاری چاہتی ہے۔چدمبر کے اس بیان کو بی جے پی نے فوراً اچک کر اس سے کانگریس کو ہدف تنقید بنانا شروع کر دیا۔ وزیر مالیات ارون جیٹلی نے کہا کہ ”آزادی“ پر کانگریس کا موقف قومی مفاد کے منافی ہے جبکہ ان کی ساتھی وزیر سمرتی ایرانی نے اس بیان کو نہایت تکلیف دہ اور شرمناک بتایا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Congress panel to visit ladakh in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply