منموہن سنگھ کے خلاف وزیر اعظم کے تبصرہ پر احتجاج میں کانگریسیوں کا پارلیمنٹ سے واک آؤٹ

نئی دہلی: سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ پر ’رین کوٹ پہن کر نہانے‘ کے وزیر اعظم نریندر مودی کے کل کے تبصرے کے سلسلے میں کانگریس اراکین نے آج لوک سبھا سے واک آؤٹ کیا۔ وزیر اعظم نے کل راجیہ سبھا میں کہا تھا کہ ریٹ کوٹ پہن کر غسل خانہ میں نہانے کا فن مسٹر منموہن سے سیکھنا چاہیے۔ وقفہ صفر کے دوران کانگریس کے ملک ارجن کھڑگے نے یہ معاملہ اٹھانا چاہا لیکن لوک سبھا اسپیکر سمترا مہاجن نے یہ کہتے ہوئے اس کی اجازت نہیں دی کہ راجیہ سبھا کا معاملہ لوک سبھا میں نہیں اٹھایا جا سکتا۔
یہ سنتے ہی کانگریسی اراکین اپنی نشستوں سے کھڑے ہو گئے اور اسپیکر کی کرسی کے قریب پہنچ کر وزیر اعظم سے اپنا بیان واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے ’وزیر اعظم ایوان میں آو، جمہوریت کی توہین نہیں سہیں گے، تاناشا ہی بند کرو، جیسے نعرے لگانے لگے۔ کانگریسی اراکین نے وزیر اعظم کے اس تبصرہ کے خلاف اعتراض کرتے ہوئے جم کر نعرے بازی کی۔ اس درمیان پارلیمانی امور کے وزیر اننت کمار مسٹر کھڑگے کو یہ بتانے کے لئے کھڑے ہوئے کہ دوسرے ایوان کا معاملہ لوک سبھا میں نہیں اٹھایا جا سکتا۔
اسپیکر سمترا مہاجن نے بھی ارکان کو پرسکون رہنے کی اپیل کی اور کہا کہ جو کچھ کہا جا رہا ہے وہ ریکارڈ نہیں کیا جائے گا لیکن اس کے باوجود کانگریسی اراکین پرسکون نہیں ہوئے اور تھوڑی دیر بعد کانگریس صدر سونیا گاندھی سمیت تمام اراکین ایوان سے واک آو¿ٹ کر گئے۔

Title: congress mps walk out of lok sabha protesting pm modis remarks against manmohan | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply