گجرات انتخابات جیتنے کے لئے دہشت گردوں سے بھی ہاتھ ملا سکتی ہے کانگریس : نتن پٹیل

گاندھی نگر: ( یو این آئی) گجرات میں س برسراقتداد بی جے پی کے سینئر لیڈر اور نائب وزیر اعلی نتن پٹیل نے آج کہا کہ کانگریس ریاست میں انتخابات جیتنے کی بےقراری میں دہشت گردوں اور نکسلیوں کو بھی اپنی ٹیم میں شامل کر سکتی ہے۔
مسٹر پٹیل نے آج یہاں آشا ورکروں کی تنخواہوں میں 50 فیصد اضافہ، ٹپک آب پاشی آلات سے جی ایس ٹی کا بوجھ کسانوں کے لئے ہٹانے، 10 سال پرانے تربیت یافتہ اور اہلیت امتحان پاس ٹھیکہ والے اساتذہ کو مستقل کرنے سمیت کئی اعلانات کرنے کے بعد صحافیوں سے کہا کہ کانگریس گجرات میں اسمبلی انتخابات جیتنے کے لئے کسی بھی حد تک جا سکتی ہے۔
پہلے بھی یہ جے این یو میں پاکستان زندہ باد کے نعرے لگانے والوں کی حمایت کر چکی ہے اور راہل گاندھی بھی وہاں جا چکے ہیں۔اب اگر انہیں یہ لگے کہ کسی نکسلی یا پاکستان میں رہنے والے خونخوار دہشت گرد کو پارٹی میں شامل کرنے سے گجرات کا الیکشن جیتا جا سکتا ہے تو وہ فوری طور پر ایسا کریں گے۔ انہوں نے دعوی کیا کہ کانگریس میں کل شامل ہونے والے الپیش ٹھاکور اور دیگر نے اس کے لیے اسمبلی کی نشستوں کا سودا کیا ہے۔
کانگریس اپنے اصلی کارکنوں کو نظر انداز کرکے ہر نئے شامل ہونے والوں کو نشستیں دینے پر رضامند ہو رہی ہے۔بتایا جا رہا ہے کہ یہ سماج وادی پارٹی، نیشنلسٹ کانگریس پارٹی اور دیگر کے ساتھ بھی سیٹوں کا اشتراک کرنے کے لئے کیا جا رہا ہے۔ ایسے میں اس کی حالت فلم ’شعلے‘ کے مشہور ڈائیلاگ ’آدھے ادھرجاؤ اور آدھے ادھرجاؤاور باقی میرے ساتھ آؤ’جیسی ہو جائے گی یعنی اس کو اپنے کارکنوں کے لئے کوئی سیٹ ہی نہیں بچے گی۔
ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ کانگریس ایک کمزور پارٹی ہے جبکہ بی جے پی ملک اور گجرات کی مضبوط ترین پارٹی ہے۔صرف گجرات میں اس کے ایک کروڑ کارکن ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Congress can even join hands with naxalsterrorists to win gujarat polls nitin patel in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply