گوا ، منی پور میں بی جے پی کی حکومت سازی پر راجیہ سبھا میںکانگریس کازبردست ہنگامہ

نئی دہلی: کانگریس نے بھارتیہ جنتاپارٹی پر گوا اور منی پور میں جوڑتوڑ کرکے حکومت بنانے کا الزام لگاتے ہوئے آج راجیہ سبھا میں زبردست ہنگامہ کیا اور وہاں کے وزرائے اعلیٰ کے استعفا اور صورت حال جوں کی توں برقرار رکھنے کا مطالبہ کیا۔ کانگریس نے یہ بھی کہا کہ گوا اورمنی پور دونوں ریاستوں میں سب سے بڑی پارٹی ہونے کے باعث گورنر کو کانگریس کو حکومت بنانے کا موقع دینا چاہئے۔
اپوزیشن اراکین کے ہنگامہ کی وجہ سے نائب اسپیکر پی جی کورین کو ایوان کی کارروائی تین بجے تک ملتوی کرنی پڑی۔ اس سے پہلے بارہ بجے بھی اسی معاملے پر کانگریس کے ہنگامے کی وجہ سے ایوان کی کارروائی دوبار ملتوی کرنی پڑی تھی۔
لنچ کے بعد جیسے ہی ایوان کی کارروائی شر وع ہوئی اپوزیشن لیڈر غلام نبی آزاد نے کہا کہ بی جے پی نے گوا اور منی پور دونوں ریاستوں میں اقلیت میں ہونے کے باوجود گورنر کی مدد سے جوڑ توڑ کرکے حکومت بنالی۔ یہ عوام کی توہین ہے۔ انہوں نے کہا کہ گوا میں وزیر اعلیٰ اور سات وزراء الیکشن ہار گئے جو اس امرکی نشاندہی کرتی ہے کہ عوام بی جے پی سے کس قدر ناراض ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Cong uproar over guvs role in goa manipur disrupts rs work in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply