حیدر آباد دکن کے رحمت نگر میں پتھراؤ ،فرقہ وارانہ کشیدگی ،بڑی تعداد میں پولیس تعینات

حیدرآباد:شہر حیدرآبادکے جوبلی ہلز کے رحمت نگر علاقہ میں تھوڑی کشیدگی نظرآئی۔ دودن پہلے عامر نامی الکڑیشین کے قتل کی واردات پیش آئی تھی۔ کل شب بعض افراد نے بعض مکانات پر پتھرپھینکے۔پولیس کاکہنا تھا کہ عامر کاجھگڑے کے بعد قتل کردیا گیا تھا۔پیر کی دوپہر پولیس نے عامرکی لاش پوسٹ مارٹم کے بعد ان کے رشتہ داروں کے حوالے کی تھی۔ ان کی تدفین کے بعد اس علاقہ میں حالات کشیدہ رہے۔بعض افراد نے دوسرے فرقہ کے کچھ مکانات پر سنگباری کی۔اس موقع پر وہاں موجود پولیس نے فوری مداخلت کی اور ہجوم کو منتشرکردیا۔کسی بھی ناگہانی واقعہ کوروکنے کے لئے پولیس کی مزید فورس تعینات کردی گئی۔
500ملازمین پولیس سمیت ریاپڈ ایکشن ٹیموں اورٹاسک فور س کی ٹیموں کو بھی یہاں تعینات کردیا گیا ہے۔کمشنر پولیس حیدرآبادمہیندر ریڈی پولیس کے دیگر سینئر افسروں کے ساتھ وہاں پہنچے اورصورتحال کاجائزہ لیا۔کمشنر پولیس نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہاکہ عامرکے قتل میں ملوث افراد کوگرفتارکرلیا گیاہے۔ انہوں نے کہاکہ اس واقعہ میں ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ڈپٹی کمشنر پولیس ویسٹ زون اے وینکٹیشورراو نے کہا کہ ہجوم نے ان افراد کے مکانات پر سنگباری کی جن پر عامر کے قتل میں ملوث ہونے کاشبہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس علاقہ میں کوئی فرقہ وارانہ کشیدگی نہیں ہے جیساکہ سوشیل میڈیا پر دیکھاجارہا ہے۔انہوں نے کہاکہ افواہیں پھیلانے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ بی جے پی کے لیڈر کشن ریڈی بھی اطلاع پر وہاں پہنچے اور سنگباری کرنے والو ں کے خلاف کارروائی کرنے کامطالبہ کیا۔

Title: communal tension in hyderabad | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply