کوئلہ بلاک الاٹمنٹ کیس میں خصوصی عدالت کے کسی بھی عبوری حکم کو ہائی کورٹ میں چیلنج نہیں کیا جاسکتا:سپریم کورٹ

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے آج واضح کیا کہ کوئلہ بلاک الاٹمنٹ گھپلہ معاملے میں خصوصی عدالتوں کے کسی بھی عبوری حکم کے خلاف درخواست کی سماعت سوائے سپریم کورٹ کے کوئی اور عدالت نہیں کر سکتی۔ عدالت عظمیٰ کا یہ حکم صنعت کار نوین جندل، سابق وزیر اعلی مدھو کوڑا اور دویندر درڈا وغیرہ کے لئے زبردست جھٹکا مانا جا رہا ہے۔ جسٹس مدن بی لوکر کی صدارت والی تین رکنی بنچ نے عدالت کے 25 جولائی 2014 کے حکم پر دوبارہ غور کرنے سے انکار کر دیا۔ عدالت نے کہا کہ نچلی عدالت کے عبوری حکم کو ہائی کورٹ میں چیلنج نہیں کیا جا سکتا۔
عدالت نے اپنے سابقہ حکم میں کہا تھا کہ کوئلہ بلاک الاٹمنٹ گھپلہ کے معاملے کی سماعت کے دوران خصوصی عدالت کے کسی بھی عبوری حکم کو صرف عدالت عظمی میں ہی چیلنج کیا جا سکے گا۔ جسٹس لو?ر نے کہا کہ وہ 25 جولائی 2014 کے اس حکم کا جائزہ لینا مناسب نہیں سمجھتے۔ کورٹ کا آج کا حکم مختلف عرضیوں پر آیا ہے جن میں یہ پوچھا گیا تھا کہ کیا کولگیٹ معاملے کی سماعت کے دوران خصوصی عدالت کے عبوری حکم کو دہلی ہائی کورٹ میں چیلنج کیا جا سکتا ہے یا نہیں؟

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Coal scam only supreme court can hear pleas challenging the orders of special courts in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply