ڈوکلام میں چینی تعمیراتی سرگرمیاں جاری رہنے پر ہند سخت تشویش میں مبتلا

نئی دہلی: سکم ۔تبت۔بھوٹان تراہے کے قریب واقع ڈوکلام علاقہ میں چینی سڑک و فوجی بنیادی ڈھانچہ کی تعمیر کا سلسلہ جاری رہنے سے ہندوستان کی تشویش بہت زیادہ بڑھ گئی ہے کیونکہ پیپلز لبریشن آرمی اب خطہ میں سڑک کا محور چوڑا کر کے ہندوستانی چوکیوں کے ارد گرد گھیرا ڈال رہی ہے۔
ذرائع کے مطابق چینی فوجی اس پہاڑی خطہ میں، جو ڈوکلام کے ایک بڑے حصے پر محیط ہے، واقع ہندوستانی فوجی چوکی کے اطراف یا انہیں نظر انداز کر کے چوکی سے محض4کلومیٹر کی دوری پر1.3کلومیٹرطویل ایک نئی سڑک تعمیر کر رہے ہیں اور مواصلاتی نظام نصب کرنے کے لیے کھدائی کر رہے ہیں۔
یہ متبادل راستہ جنوبی ڈوکلام میں جام فیری پہاڑی علاقہ تک ان کی رسائی کا وہی ذریعہ بن سکتا ہے جو گذشتہ سال پیپلز لبریشن آرمی چاہ رہی تھی جس کے باعث73روز تک فوجی تعطل ہوگیاتھا۔
ماضی میں ڈوکلام میں پیپلز لبریشن آرمی کے گشت لگانے پر ہندوستان نے کبھی اعتراض نہیں کیالیکن گذشتہ سال وسط جون میں اس وقت اسے مداخلت کرنا پڑا جب چینی فوجیوں نے جامفیری پہاڑی علاقہ رخی ایک سڑک تعمیر کر کے جوں کی توں کیفیت کو بگاڑنے کی کوشش کی۔

Title: china trying to outflank indias positions with road in doklam | In Category: ہندوستان  ( india )
Tags: , ,

Leave a Reply