یوم آزادی خطاب میں ججوں کے تقرر کا ذکر نہ کرنے پر چیف جسٹس کا مودی سے شکوہ

نئی دہلی:ججوں کے تقرر کے معاملے پر حکومت اور عدلیہ میں تنازعہ کے درمیان سپریم کورٹ کے چیف جسٹس ٹی ایس ٹھاکر نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی جانب سے لال قلعہ کی فصیل سے یوم آزادی کے دوران ججوں کی تقرری کے مسئلے کا ذکر نہیں کیے جانے سے انہیں مایو سی ہوئی ہے۔جسٹس ٹھاکر نے یہاں سپریم کورٹ میں پرچم کشائی کے بعد کہا کہ انہیں امید تھی کہ وزیر اعظم عدالتی نظام میں تعطل سے منسلک مسائل بالخصوص ججوں کے تقررکے سلسلے میں کچھ کہیں گے۔
انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے اس مسئلے کا ذکر نہیں کیا لیکن وہ درخواست کرتے ہیں کہ حکومت عدلیہ اور خاص طور پر ججوں کی تقرری کے معاملے پر توجہ دے اور خالی عہدوں کوپرکرنے میں پیش رفت کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو ملک کے عدالتی نظام سے بہت سے توقعات وابستہ ہیں اور ان کی اپیل ہے کہ عوام کو انصاف دلانے کے لئے وزیر اعظم چند قدم اٹھائیں۔ عدالتوں میں زیر التوا مقدمات کی تعداد اتنی زیادہ ہو گئی ہے کہ ان کا نمٹا رہ کرنا انتہائی مشکل ہوتا جا رہا ہے۔
چیف جسٹس نے ججوں کی تقرری میں تاخیر پر حال ہی میں سخت تبصرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ حکومت اس بارے میں فیصلہ نہیں کر رہی ہے۔ عدالت نے اٹارنی جنرل کو ہدایت دی تھی کہ وہ اس بارے میں حکومت سے بات کریں۔ جسٹس ٹھاکر نے اس سال اپریل میں بھی ایک پروگرام میں وزیر اعظم کی موجودگی میں جذباتی ہوتے ہوئے کہا تھا کہ اعلی عدالتوں میں زیر التوا مقدمات کی تعداد 21000 سے بڑھ کر 40000 تک پہنچ گئی ہے اور عدالتیں اس بوجھ کے نیچے دبی جا رہی ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Chief justice ts thakur questions pms silence on appointment of judges in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply