آندھرا پردیش میں سی بی آئی بلا اجازت داخل نہیں ہو سکتی

حیدرآباد: آندھرا کے وایر اعلیٰ چندر بابو نائیڈو نے ملک کی سب سے بڑی سراغرساں ایجنسی مرکزی تحقیقاتی بیورو( سی بی آئی) کوکسی بھی معاملہ کی تحقیقات کے لیے ریاست میں داخل ہونے کی سی بی آئی کو دی گئی کھلی اجازت واپس لے لی۔

اب سی بی آئی کسی بھی معاملہ کی تحقیقات میںریاست میں داخل ہونے کے لیے حکومت آندھرا پردیش کی اجازت لینا پڑے گی۔ذرائع نے بتایا کہ اس وقت سی بی آئی مین جو داخلی انتشار پھیلا ہوا ہے اور جس طرح افسرون کے درمیان تنازعہ سپریم کورٹ پہنچا ہے اس سے سی بی آئی کی معتبریت اور اس پر اعتماد کم ہو جانے کے باعث نائیڈو حکومت کو یہ فیصلہ لینا پڑا۔

لیکن سیاسی حلقوں میں ریاستی حکومت کے اس اقدام کو اتحاد کے لیے غیر بی جے پی پارٹیوں سے نائیڈو کا راہ و رسم بڑھانے سے مرکز سے ٹکراؤ اور کشیدگی میں اضافہ کی روشنی میں دیکھا جارہا ہے۔

آندھرا حکومت نے اس ضمن میں جو فرمان جاری کیا وہ یہ ہے”دہلی پولس اسٹیبلشمنٹ ایکٹ1946(سینٹرل ایکٹ نمبر 25/1946)کی دفعہ 5کے تحت دیے گئے اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے حکومت جی او نمبر 109محکمہ داخلہ میں دہلی اسپیشل پولس اسٹیبلشمنٹ کے تمام اراکین کے ذریعہ 3اگست2018کو تجدید کئے گئے اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے آندھرا پردیش میں سی بی آئی کے داخلے کے لیے ملی عام اجازت واپس لے رہی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Chandrababu naidu bars cbis entry into andhra pradesh without permission in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
What do you think? Write Your Comment