حیدر آباد دکن کے نیلوفر اسپتال میں5حاملہ خواتین کی موت کے بعد سیزیرین آپریشن روک دیے گئے

حیدرآباد: شہر حیدرآباد کے مشہور نیلوفر اسپتال میں سیزیرین آپریشن کے دوران زائد خون بہہ جانے سے مرنے والی خواتین کے رشتہ داروں نے آج اسپتال میں احتجاج کیا۔ ان کی حمایت میں کانگریس اور این ایس یو آئی کے لیڈروں اور کارکنوں نے بھی احتجاج کیا جنہیں روکنے کی پولیس نے کوشش کی۔ اس احتجاج سے صورتحال کشیدہ ہوگئی۔ احتجاجیوں نے حکومت کے خلاف نعرے لگائے۔ بعد ازاں پولیس نے انہیں حراست میں لے کر حوالات میں ڈال دیا۔ اسپتال کے سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر سریش کمار نے ان اموات کی تصدیق کرتے ہوئے ڈاکٹروں کی ہنگامی میٹنگ طلب کرلی۔
بعد ازاں انہوں نے خواتین کی اموات کی تحقیقات سرکاری سطح کی کمیٹی سے کرانے کا اعلان کیا اور کہا کہ جانچ کی تکمیل کے بعد ہی دوبارہ سیزیرین آپریشن کئے جائیں گے۔ احتجاجیوں نے اموات پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے اس کیلئے ڈاکٹرس کو ذمہ دار قرار دیا۔ واضح رہے کہ ان اموات کے بعدگزشتہ ایک ہفتہ سے حاملہ خواتین کے سیزیرین آپریشن روک دیئے گئے۔ ہنگامی حالات میں بھی آپریشن نہ کرنے پر اس اسپتال کی حاملہ خواتین اور ان کے رشتہ دارسخت تشویش میں مبتلا ہو گئے ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Cesarean operations stopped in niloufer hospital hyderabad in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply