سی بی آئی ڈائریکٹر الوک ورما کی عذر داری پر سماعت29نومبر تک ملتوی

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے چیف جسٹس آف انڈیا رنجن گوگوئی نے سی بی آئی تنازعہ سے وابستہ دستاویزات کے میڈیا میں افشا ہونے پر اظہار برہمی کرتے ہوئے خفیہ ایجنسی کے ڈائریکٹر الوک ورما کے اختیارات سلب کرنے اور انہیں رخصت پر بھیج دینے کے سرکاری حکم کو چیلنج کرنے والی ان کی عذر داری پر سماعت 29نومبر تک ملتوی کر دی۔

چیف جسٹس نے کیس کی فائل سامنے رکھے جاتے ہی یہ کہتے ہوئے منگل کے روز سماعت کرنے سے انکار کردیا کہ عدالت کو نہیں لگتا کہ آپ میں سے کوئی بھی سماعت کا حقدار ہے۔ چیف جسٹس نے الوک ورما کے وکیل فالی نریمان دی وائر میں شائع اس رپور ٹ کی نقل دی جس میں سینٹرل وجیلنس کمیشن کو الوک ورما کے جواب کا حوالہ دیا گیا تھا۔

رپورٹ نریمان کو دکھاتے ہوئے جسٹس گوگوئی نے طنزیہ کہا کہ روپرٹ تو شاید سربمہر لفافہ میںدی گئی تھی۔جس پر نریمان نے کہاکہ وہ اس کے افشا پر خود بہت زیادہ پریشان ہیں ۔تاہم نریمان کی چیف جسٹس سے اس استدعا کے بعدکہ وہ کیس کی سماعت کریں اورر میڈیا میں رپورٹ افشا ہونے کے الزامات کی واضاحت کا ایک اور موقع دیں جسٹس گوگوئی نے 29نومبر کو سماعت کرنا منظور کر لیا۔

واضح ہو کہ عدالت عظمیٰ الوک ورما کے خلاف، جنہوں نے سربمہر لفافے میں اپنا جواب داخل کیا تھا، معاملہ کی سماعت کر رہی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Cbi vs cbi angry cji adjourns case in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
What do you think? Write Your Comment