جموں و کشمیر کے مسئلہ کے حل کیلئے تمام ریاستی فریقوں سے مذاکرات کی ضرورت: بی جے پی

نئی دہلی: وزیر اعظم کے دفتر میں وزیر مملکت اور جموں و کشمیر سے ممبر پارلیمنٹ جتیندر سنگھ نے جموں و کشمیر مسئلہ کے حل کے لئے مخلص سیاسی پہل کرنے اور اس کے لئے ریاست کے تمام فریقوں کے ساتھ بات چیت شروع کرنے پر زور دیا۔
مسٹر سنگھ نے آج راجیہ سبھا میں وادی کشمیر کی موجودہ صورتحال پر جاری بحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ وہاں کے مسئلے کے حل کے لئے نہ صرف حریت بلکہ لداخ، پاکستان کے ناجائز قبضے والے کشمیر اور کشمیری پنڈتوں سے بھی بات چیت کرنی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ اس ماہ کی 23 اور 24 تاریخ کو سرینگر میں تھے اور انہوں نے کانگریس کے رہنماؤں سے ملنے کی کوشش کی تھی لیکن اس پارٹی کے کسی بھی لیڈر نے ان سے ملاقات نہیں کی۔
مسٹر سنگھ نے کہا کہ جموں و کشمیر کے مسئلے پر کل جماعتی اجلاس ہو، یہ اچھی بات ہے لیکن وہاں کی بی جے پی۔ پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) اتحادی حکومت کو وہاں کے لوگوں کا مینڈیٹ ملا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کا آئین بھی کہتا ہے کہ وہ ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ہے۔انہوں نے کہا کہ وادی میں حالیہ واقعات میں انتہائی غریب لوگوں کے بچے مارے گئے ہیں اور یہ وہ لوگ ہیں جن کو کشمیری لیڈران یہ کہہ کر اکساتے ہیں کہ جہاد میں شہید ہونے والا جنت میں جاتا ہے۔
لیکن یہ لیڈان نہ خود اس پر عمل کرتے ہیں اور نہ ہی اپنے بچوں کو جہاد کا درس دیتے ہیں بلکہ انہیں وہ بیرون ملک تعلیم حاصل کرنے بھیج دیتے ہیں۔جبکہ انہیں اپنے بچوں کو بیرون ملک بھیجنے کے بجائے پہلے جہاد کے لئے بھیجنا چاہیے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Can you have kashmiriyat without pandits asks mos jitendra singh in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply