بلند شہر ہائی وے پر ماں بیٹی سے اجتماعی جنسی زیادتی کا کلیدی ملزم سمیت مزید تین گرفتار

بلندشہر: اترپردیش کے بلندشہر میں گزشتہ دنوں ماں بیٹی کی اجتماعی عصمت دری کے اہم ملزم سلیم باوریا سمیت تین حیوانوں کو پولیس نے گرفتار کرنے کا دعوی کیا ہے تاہم واقعہ کا ایک اور ملزم اب تک قانون کے گرفت میں نہیں آیا ہے۔
انسانیت کو شرمسار کر دینے والے واقعہ کے سلسلے میں پولیس اب تک چھ ملزمین کو گرفتار کر چکی ہے۔ ضلع کے کوتوالی دیہات تھانہ علاقے میں 29 جولائی کی دیر رات چار درندوں نے قومی شاہراہ پر کار پر سوار نوئیڈا کے ایک کنبہ کو یرغمال بنا کر لوٹ مار کے بعد شادی شدہ خاتون اور اس کی نابالغ بیٹی کی عصمت دری کی تھی۔
پولیس نے متاثرہ کنبہ کی شناخت کے بعد واردات میں باوریا گروہ کے ملوث ہونے کی تصدیق کی تھی۔ نوئیڈا میں واقع کلکٹریٹ احاطے میں منعقدہ پریس کانفرنس میں میرٹھ زون کے پولیس انسپکٹر جنرل سجیت پانڈے نے آج یہاں بتایا کہ اجتماعی عصمت دری کے اہم ملزم سلیم باوریا کو پولیس نے کل رات اس کے دو ساتھیوں کے ساتھ میرٹھ سے گرفتار کرلیا۔
پکڑے گئے بدمعاشوں کے قبضے سے دو طمنچے، خواتین سے لوٹے گئے زیورات، نقدی اور کپڑے برآمد کئے گئے ہیں۔ واقعہ کو انجام دینے والا ایک دیگر ملزم ابھی پولیس کی گرفت سے باہر ہے۔
مسٹر پانڈے نے بتایا کہ میرٹھ کے نزدیک موانا قصبے سے سلیم باوریا کے علاوہ پولیس نے پرویز اور زبیر کو پکڑلیا۔ واقعہ کے دو دن بعد ہی پولیس نے اس سلسلے میں رئیس، جبر سنگھ اور شاویز کو گرفتار کر کے پہلے ہی جیل بھیج دیا تھا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bulandshahr gang rape 3 including main accused arrested in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply