اتر پردیش میں دلت مسلم اتحاد سے بی ایس پی بر سر اقتدار آئے گی:مایاوتی

لکھنؤ: اترپردیش میں ہونے والے ریاستی اسمبلی انتخابات کے مدنظر اپنی سیاسی مہم کو تیز کرتے ہوئے بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کی صدر مایاوتی نے کہا کہ فرقہ ورانہ طاقتوں کو صوبہ میں اقتدار میں آنے سے روکنے کے لئے مسلمانوں کو دلتوں کے ساتھ کندھے سے کندھا ملا کر کھڑا ہونا پڑے گا۔
محترمہ مایاوتی نے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مسلمان اگر دلتوں کے ساتھ مل کر بی ایس پی کو ووٹ دیتے ہیں تو الیکشن میں بی جے پی کو آسانی سے شکست دی جاسکتی ہے۔ انہوں نے دعو یٰ کیا کہ ریاست میں بی ایس پی کا اصل ووٹ بینک(دلت) تقریباً 25 فیصد ہے۔ اس لحاظ سے ہر اسمبلی علاقہ میں تقریباً پچاس ساٹھ ہزار ووٹ دلتوں کا ہے۔ اس میں اگر مسلمان اور کس دیگر ذاتوں کا ووٹ شامل ہوجائے تو بی ایس پی کو اقتدار میں آنے سے کوئی نہیں روک سکتا۔
انہوں نے کہا کہ دوسری طرف سماج وادی پارٹی کا اصل ووٹ بینک (یادو) کی آباد ی صرف پانچ چھ فیصد ہے۔ تقریباً ساٹھ اسمبلی حلقو ں میں یہ ذات فیصلہ کن پوزیشن میں ہے۔ اس کے باوجود اگر کوئی بڑا ووٹ بینک سماج وادی پارٹی کو نہیں ملتا ہے حکومت بنانا تو دور اس کے امید واروں کے لئے ضمانت بچانا بھی مشکل ہوجائے گا۔
عوام سماج وادی پارٹی کے جانبدارانہ ترقی اور جنگل راج سے پریشان ہے اور بی جے پی سے نوٹوں کی منسوخی کے باعث ناراض ہے۔ اس لئے بی ایس پی کا پلڑا بھاری ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bsps allahabad rally was an effort to showcase dalit muslim alliance in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply