تعلیم کے میدان میں مسلمانوں کو دوسری قوموں کے متوازی لانے کی ضرورت : حامد انصاری

نئی دہلی: نائب صدر جمہوریہ ڈاکٹر حامد انصاری نے کہا ہے کہ جب تک مسلمان تعلیم کی بنیاد کو مضبوط نہیں کریں گے وہ ترقی کی دوڑ میں آگے نہیں نکل سکتے۔
ڈاکٹر حامد انصاری نے تعلیم سے معاشرے کی ترقی اور فلاح و بہبود کے موضوع پر یہاں منعقدہ’تعلیم و تربیت‘کانفرنس میں مہمان خصوصی کے طور پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں کو یہ سمجھنا چاہیے کہ تعلیم سے ہی ان کی ترقی ہو سکتی ہے۔ مسلم کمیونٹی نے انجینئرنگ اور میڈیکل کالج کھولنے پر تو توجہ دی لیکن پرائمری اور ثانوی اسکول بنانے پر توجہ نہیں دی۔
انہیں یہ بات سمجھنی چاہئے کہ مضبوط بنیاد پر ہی کوئی پائیدار عمارت کھڑی ہو سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کو اس بات پر غور کرنا چاہئے کہ ملک کے شہری کے طور پر تعلیم کے میدان میں ان کا کیا مقام ہے؟اس سلسلے میں انہوں نے اتر پردیش کے اٹاوہ میں سوا سو سال پرانے ایک اسلامی کالج کے دورے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ وہاں لوگوں سے بات چیت کرنے پر انہیں پتہ لگا کہ مسلمان ساتویں۔
آٹھویں کلاس کی پڑھائی کے بعد اپنے بچوں کو یہ کہہ کر کام میں لگا دیتے ہیں کہ وہ گھر چلانے میں ہاتھ بٹائیں۔ڈاکٹر حامد انصاری نے کہا کہ ملک کا شہری ہونے کے ناطے مسلمانوں کے بھی اتنے ہی حقوق ہیں، جتنے دیگر شہریوں کو حاصل ہیں۔
کانفرنس میں مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے وائس چانسلر ظفر سریش والا اور وائس چانسلر ڈاکٹر اسلم پرویز، یونیورسٹی گرانٹ کمیشن کے صدر ڈاکٹر ویدپرکاش، یونین بینک کے چیف منیجنگ ڈائریکٹر ارون تیواری، ہندوستان کنسٹرکشن کمپنی کے چیف منیجنگ ڈائریکٹر اجیت گلاب چند اور بمبئی اسٹاک ایکسچینج کے چیف ایگزیکٹو افسر برکت چوان نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bring minorities at par with other communities vice president hamid in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply