راجستھان میں بھی کسی بھی وقت کسان تحریک شروع ہو سکتی ہے

جے پور : بی جے پی کے رکن اسمبلی گھنشیام تواڑی نے کہا کہ ریاستی حکومت کی کسان مخالف پالیسی کی وجہ سے راجستھان میں بھی کسان تحریک کرنے والے ہیں اور کبھی بھی یہاں بھی دیگر ریاستوں سے بھی پر تشدد تحریک ہو سکتی ہے۔ مسٹر تواڑی نے آج یہاں اپنی رہائش گاہ پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ اگر راجستھان میں کسانوں کی تحریک ہوتی ہے تو یہ مدھیہ پردیش اور مہاراشٹر سے بھی زیادہ خوفناک ہوگی۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ کسانوں کو بھی گرانٹ کی جگہ کارپوریٹ گھرانوں کو دیئے جانے والے انسینٹیو کی طرح رقم دی جانی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں کسانوں کے لیے یکساں پالیسی ہونی چاہیے۔
مسٹر تواڑی نے ریاستی حکومت کی طرف سے منظور شدہ ’خصوصی سرمایہ کاری شعبہ کےبل‘ کو کسان مخالف بتاتے ہوئے کہا کہ یہ بل صرف کارپوریٹ شعبہ کے سرمایہ داروں کو فائدہ پہنچانے کے لیے ہے۔اس بل سے حکومت ایک ساتھ من مرضی سے زمین حاصل کر سکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس بل کے نافذ ہونے سے مافیا اور غنڈوں کو گھروں میں گھسنے کی چھٹ مل جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بل میں کئے گئے التزام میں میونسپل اداروں، پنچایت اور افراد کے حقوق کا بھی گلا گھونٹ دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں سب سے زیادہ متاثر کسان ہیں۔ راجستھان میں پیاز، لہسن، سرسوں کی فصلوں کی مناسب قیمت نہ ملنے سے کسانوں میں بھاری مایوسی ہے اور حکومت کی طرف سے مناسب قیمتوں پر گندم اور جو کی خریداری بھی نہیں کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کی سروے رپورٹ کے مطابق راجستھان میں 22 فیصد کسان کھیتی چھوڑ چکے ہیں اور اگر یہی صورت حال برقرار رہی تو حالات اور بگڑ جائیں گے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bjp ruled rajasthan to be rocked by farm protests in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply