بی جے پی کی تاریخی کامیابی، تنہا اپنے بل پر 300سے زائد سیٹیں جیتنے کی راہ پر گامزن

نئی دہلی:ہندوستان میں دنیا کی سب سے زیادہ مقبول کرکٹ لیگ آئی پی ایل کے بعد دنیا کے طویل ترین انتخابات کا عمل بھی سات مرحلوں کی پولنگ اور ایکزٹ پول سے گذرتا ہوا23مئی کے فائنل میںووٹوں کی گنتی ، رجحان اور کچھ نتائج کے ساتھ ہی پایہ تکمیل کو پہنچ گیا۔ اب صرف اس فائنل کے فاتح کا باقاعدہ اعلان ہی باقی ہے جو جلد ہی کر دیا جائے گا۔

لیکن اب تک کے جو رجحانات اور نتائج سامنے آئے ہیں اس سے بی جے پی قیادت والا حکمراں محاذ نہ صرف اقتدار میں واپس آگیا بلکہ اس کی قائد بی جے پی نے جہاں ایک طرف مغربی بنگال اور کرناٹک میں بھی زبردست کامیابی سے اتر پردیش میں ہونے والے چند سیٹوں کے نقصان کا ازالہ کر کے تنہا اپنے بل پر 300کا ہندسہ پار کرنے کی جانب پیش قدمی کرتے ہوئے ہندوستانی سیاست کی تاریخ میں تسلسل سے اقتدار میں واپس آنے والی دوسری پارٹی ہونے کا بھی اعزاز حاصل کر لیا۔اس سے قبل یہ اعزاز صرف کانگریس کو ہی حاصل تھا۔

یہی نہیں بلکہ اس نے حال ہی میں اسمبلی انتخابات ہارنے والی ریاستوں مدھیہ پردیش، راجستھان اور چھتیس گڑھ میں بھی زبردست کامیابی حاص کرتے ہوئے کم و بیش صدفیصد سیٹیں جیتنے کے امکانات روشن کر لیے کیونکہ ان تمام سیٹوں پر اسی کے امیدوار سبقت حاصل کے ہیں۔ دہلی میں سات مٰن سے سات، ممبئی میں 6میں سے 6،جموں و کشمیر میں 6میں سے 3راجستھان میں25میں سے25، اڑیسہ میں21میں سے9، ہریانہ میں10میں سے10کرناٹک میں 28میں سے24،ہماچل میں چر میں سے چار۔ گجرات میں 26میں سے26،مدھیہ پردیش میں 29میں سے28 ، جھارکھنڈ میں14میں سے12اوراترا کھنڈ میں5میں 5سیٹیں جیت لیں۔

2014کے لوک سبھا انتخابات میں مودی لہر کے اثر سے محفوظ رہنے والی ممتا بنرجی کی ترنمول کانگریس اور اڑیسہ میں نوین پٹنائک کی بیجو جنتا دل بھی اس بار خود کو اس بار ”اب کی بار ،پھر مودی سرکار اور سیٹیں 300پار “نعرے کے ساتھ نمودار ہونے والی مودی لہر سے نہ بچا سکیں۔


الیکشن کمیشن نے ملک میں17ویں لوک سبھا کے انتخابات کے لیے 6 ہفتوں پر محیط عام انتخابات کرانے کا مارچ میں اعلان کیا تھا، جہاں 11 اپریل سے 19 مئی تک سات مرحلوں میں ہونے والی پولنگ میں 542حلقوں میں90کروڑ افراد نے اپنا حق رائے دہندگی استعمال کیا۔قابل ذکر بات یہ ہے کہ بی جے پی صدر امیت شاہ اپنی آبائی ریاست گجرات کے گاندھی نگر میں5لاکھ سے زائد ووٹوں سے سبقت حاصل کے ہوئے جبکہ دوسری جانب کانگریس صدر رہل گاندھی نے بھی کیرل کے ویاناڈ پارلیمانی حلقہ میں 3لاکھ سے زائد ووٹوں سے سبقت حاصل کی ہوئی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bjp hovers around 300 amit shah leads by nearly 5 lakh votes in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.