ہندوستان میں سزائے موت ختم کرنے کا بل راجیہ سبھا میں صوتی ووٹوں سے مسترد

نئی دہلی:ملک میں سزائے موت کا رواج ختم کرنے کے سلسلے میں کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کے ڈی راجہ کی طرف سے پیش کردہ پرائیویٹ بل کو راجیہ سبھا میں صوتی ووٹوں سے مسترد کردیا گیا۔
امور داخلہ کے وزیر مملکت کرن رجیجو نے بل پر بحث کا جواب دینے کے بعد مسٹر راجہ سے اپنا بل واپس لینے کی اپیل کی لیکن مسٹر راجہ نے اس پر ووٹنگ کرانے کا مطالبہ کیا۔ ووٹنگ میں مسٹر راجہ کے بل کو صوتی ووٹوں سے مسترد کردیا گیا۔ مسٹر رجیجو نے کہا کہ لاکمیشن نے سزائے موت کے بارے میں اپنی رپورٹ میں کہا ہے یہ سزا دہشت گردی کے معاملے میں جاری رہنی چاہیے لیکن اس نے جنسی زیادتی کے حوالے سے کچھ نہیں کہا ہے۔
انہوں نے کہا کہ لاکمیشن کی رپورٹ کو ریاستوں کے مشورے کے لئے بھیجا گیا اور9 ریاستوں نے اسے وزارت داخلہ کو بھیج دیا ہے۔مسٹر راجہ نے کہا کہ اقوام متحدہ نے سزائے موت ختم کرنے کی اپیل کی ہے اور دنیا کے متعدد ممالک نے اس سزا کو ختم کردیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ حکومت کو سزائے موت پر ازسرنو غور کرنا چاہیے۔ راجہ نے اپنے بل میں نیشنل لا یونیورسٹی کے طلبا کے ایک جائزہ رپورٹ کا حوالہ بھی دیا جس میں کہا گیا ہے کہ دہشت گردی کے حوالے سے جنہیں سزائے کوت دی جاتی ہے ان میں94فیصد دلت طبقہ سے یا پھر مذہبی اقلیت سے تعلق رکھتے ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bill to abolish the death penalty fails by voice vote in rs in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply