سپریم کورٹ نے بلقیس اجتماعی جنسی زیادتی کیس میں حکومت گجرات کو6ماہ کی مہلت دی

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے حکومت گجرات کو چھ ہفتہ کی مہلت دی ہے کہ وہ یہ بتائے کہ 2002کے بلقیس بانو اجتماعی عصمت دری میں جن پولس اہلکاروں کو مجرم قرار دیا گیا تھا ان کے خلاف کوئی تادیبی کارروائی کی گئی یا نہیں۔
چیف جسٹس دیپک مشرا ، جسٹس اے ایم کھانویلکر اور جسٹس ڈی وائی چندر چوڑ پر مشتمل سپریم کورٹ کی ایک بنچ نے ریاستی حکومت کے نمائندہ ایڈیشنل سالسٹر جنرل تشار مہتہ کی وہ عرضداشت ،جس میں انہوں نے اس کیس میں متعلقہ حکام سے معلومات لینے کے لیے کچھ مہلت مانگی تھی، کی سماعت کرتے ہوئے یہ مہلت دی۔
لیکن اس کے ساتھ ہی بنچ نے یہ بھی واضح کر دیا کہ بلقیس بانو کو معاوضہ میں اضافہ کے لیے داخل کی گئی علیحدہ عرضی پر آئندہ ہفتہ سماعت کی جائے گی۔
واضح رہے کہ اس سے قبل بھی سپریم کورٹ اس معاملہ پر 23اکتوبر کو ریاستی حکومت کو مہلت دے چکی ہے۔بامبے ہائی کورٹ نے 4مئی کو اس کیس میں 7ڈاکٹروں اور پولس اہلکاروں کو بری کرنے کے فیصلہ کو منسوخ کرتے ہوئے 12افراد کو مجرم قرار دے کر عمرقید کی سزا کی توثیق کر دی تھی۔

Title: bilkis bano gangrape case sc grants six weeks time to gujarat govt | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply