بہار میں ایک ہفتہ میں ہجومی تشدد کی دوسری واردات،چوری کے الزام میں لڑکے کو پیٹ پیٹ کر مارڈالا

پٹنہ: بہار کے بیگو سرئے میں ابھی3روز قبل پانچویں کلاس کی ایک طالبہ کو اغوا کرنے کے لیے ایک اسکول میں گھسنے والے تین افراد کو پیٹ پیٹ کر ہلاک کرنے کی گونج تھمی بھی نہیں تھی کہ ہجومی تشدد کی دوسری واردات اس وقت پیش آئی جب سیتا مڑھی ضلع کے رام نگر گاؤں میں گلے کی چین جھپٹنے کے الزام میں ایک24سالہ شخص کوہجوم نے پیٹ پیٹ کر ہلاک کر دیا۔

یہ واردات اتوار کے روز ہوئی۔ واقعہ یوں بتایا جاتا ہے کہ ایک پک اپ وین کے ڈرائیور نے روپیش جھا نام کے ایک 24سالہ پر اس کے پیسے چوری کرنے کا الزام لگایا۔

اس نے جیسے ہی وہاں جمع گاؤں والوں سے کہا کہ یہ اس کے پیسے چھین کر بائیک سے بھاگنے کی کوشش کر رہا تھا تو وہاں موجود گاؤں والوں نے آؤ دیکھا نہ تاؤ اس نوجوان کو لاٹھی ڈنڈوں سے مارنا شروع کر دیا۔

جھا کے رشتہ داروں کا کہنا ہے کہ ہجوم نے اسے اس وقت پیٹا جب وہ ایک پک اپ وین کو اوور ٹیک کرنے کی کوشش کر رہا تھا۔

سیتا مڑھی صدر کے ڈپٹی ایس پی ویر دھریندر کے مطابق اس شخص کو شدید زخمی حالت میں پہلے صدر اسپتال پہنچایا گیا لیکن حالت غیر ہونے پر اسے پٹنہ میڈیکل کالج اینڈ ہاسپٹل منتقل کر دیا گیا لیکن وہ جانبر نہ ہو سکا۔جھا کی لاش کو پوسٹمارٹم کیے بغیر ہی آخری روسم کے لیے لواحقین کے سپرد کر دیا گیا۔اس سلسلہ میں 150افراد کے خلاف معاملہ دج کر لیا گیا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bihar fir against 150 people in sitamarhi lynching case in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply