ایل جی دہلی حکومت کے فیصلوں میں مداخلت نہیں کر سکتا،سپریم کورٹ کے فیصلہ سے کیجری وال کو زبردست تقویت پہنچی

نئی دہلی: چیف جسٹس آف انڈیا جسٹس دیپک مشرا کی سربراہی میں سپریم کورٹ کی ایک 5ججی بنچ نے رولنگ دی ہے کہ لیفٹننٹ گورنر(ایل جی) دہلی میں عام آدمی پارٹی حکومت کے ذریعہ لیے گئے پالیسی فیصلوں میں مداخلت نہیں کر سکتا۔

یہ کہتے ہوئے کہ دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ نہیں دیا جا سکتا،بنچ نے کہا کہ منتخب حکومت آئین ہند کی مشترک فہرست اور ریاستی فہرست میں قانون، پولس اور عوامی نظم و نسق جیسے تین معاملات چھوڑ کر بیان کردہ تمام امور پر اپنے قوانین و ضوابط وضع کر سکتی ہے۔

چیف جسٹس آف انڈیا نے مزید کہا کہ لیفٹننٹ گورنر کو وزارتی کونسل کے ساتھ ہم آہنگی سے کام کرنا چاہیے اور اس کے تعاون اور مشورے پر عمل کرنا چاہیے ۔

سپریم کورٹ نے کہا کہ وزراءکی کونسل کو اپنے فیصلوں سے لیفٹننٹ گورنر کا مطلع کرنا ہوگا لیکن اس کا مقصد یہ نہیں کہ وزرءلیفٹننٹ گورنر کے پابند ہیں۔ کابینہ اور الیفٹننٹ گورنر کے درمیان اختلاف رائے کسی فیصلہ میں رکاوٹ نہیں بننا چاہیے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Big win for democracy delhi cm kejriwal hails sc decision in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply