مسلم محلوں میں گھس کر پاکستان مخالف نعرے بازی کرنا معمول بن گیا ہے :ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ بریلی

بریلی:اترپردیش کے شہر کاس گنج کے فساد کے حوالے سے فیس بک پر پوسٹ کیے گئے اپنے ایک پیغام پر بریلی کے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ راگھویندر وکرم سنگھ نے صفائی دی ہے کہ حکومت کی شبیہہ خراب کرنے کی کوشش سے پریشان ہو کر انہوں نے اپنے خیالات ظاہر کیے ہیں۔
حقیقت میں ان کا کسی مذہب یا مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچانا انکا مقصد نہیں تھا۔انہوں نے کہا کہ ایسے واقعا ت سے ایڈمنسٹریشن اور پولس کے ساتھ ساتھ مقامی باشندوں کے لیے بھی پریشانیاں کھڑی ہوجاتی ہیں۔
ہم ترقی کے بارے میں سوچ رہے ہیں لیکن ایسے واقعات سے غیر ضروری رکاوٹیں کھڑی ہوجاتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ترنگا جلوس ایک خاص محلے سے نکال کر مسلمانوں کو اشتعال دلایا جاتا ہے پھر وہاں پتھراؤ کیا جاتا ہے۔
جو توانائی ترقی میں لگنا چاہیے وہ امن وقانون سدھارنے میں لگ جاتی ہے۔اس سب باتوں سے مایوس ہو کر ہی انہوں نے یہ پوسٹ کیا تھا۔سنگھ نے پہلے پوسٹ میں لکھا کہ یہ عجب رواج بن گیا ہے کہ مسلم محلوں میں زبردست جلوس لے جاؤ اور پاکستان مردہ باد کے نعرے لگاؤ۔کیوں بھائی و ہ پاکستانی ہیں کیا؟ایسی ہی واردات بریلی میں ہوئی تھی ۔
جس میں پتھراؤہوا تھااور مقدمے چلائے گئے۔انہوں نے ایک اور پوسٹ کیا تھا جس میں انہوں نے لکھا تھا کہ چین تو بڑا دشمن ہے ترنگا لے کر چین مردہ باد کیوں نہیں ۔۔۔؟

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Bareilly dm says it has now become a trend to enter muslim localities shout anti pakistan slogans in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply