آسام نیشنل رجسٹر آف سٹیزنس :سپریم کورٹ نے دعوے و اعتراضات وصولی کا عمل تا حکم ثانی موقوف کر دیا

نئی دہلی:سپریم کورٹ نے آسام میں نیشنل رجسٹر آف سٹیزنس( این آر سی ) کے حتمی مسودے کے حوالے سے دعوے اور اعتراضات داخل کرنے کا عمل تاحکم ثانی موقوف کر دیا۔جسٹس رنجن گوگوئی اور جسٹس آر ایف نریمان پر مشتمل بنچ نے این آر سی کو آڈی نیٹر پرٹیک ہجیلا کی رپورٹ کا مطالعہ کیا۔

بنچ نے اٹارنی جنرل کے کے وینوگوپال اور دیگر فریقین کو دو ہفتہ کے اندر ہجیلا کی رپورٹ کا جواب داخل کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے معاملہ 19ستمبر تک موخر کر دیا۔28اگست کو سپریم کورٹ نے کہا تھا آسام کے این آر سی کے مسودے میں حال ہی میں جو دس فیصد لوگوں کو شامل کیا گیا ہے اس کی دوبارہ تصدیق کرانے پر غور کر سکتی ہے۔

آسام کا این آر سی 30جولائی کو جاری ہوا تھا۔جس میں کہا گیا تھا کہ جن 3کروڑ29لاکھ افراد نے درخواست دی تھی ان میں سے دو کروڑ 89لاکھ افراد ملک کےشہری مان لیے گئے ہیں ۔جن لوگوں کے نام حذف کر دیے گئے ہیں ان کو کے دعوے اور اعتراضات داخل کرنے کا عمل30اگست سے شروع ہو کر 28ستمبر تک جاری رہنا تھا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Assam nrc sc again defers process of receiving claims objections until further orders in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply