آسام شہریت معاملہ پر ہنگامہ آرائی کے باعث راجیہ سبھا کی کارروائی ملتوی

نئی دہلی: آسام میں نیشنل رجسٹر آف سٹیزن کی رپورٹ پر راجیہ سبھا میںزبردست ہنگامہ آرائی کے بعد کارروائی کچھ دیر کے لیے ملتوی کر دی گئی۔حتمی مسودے میں 40لاکھ سے زائد افراد کے نام حذف کر دیے جانے پر ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) اور انڈین نیشنل کانگریس کے اراکین نے زبردست شور و غل کیا اور حکومت سے جواب دینے کا مطالبہ کیا۔

رپورٹ جاری ہوتے ہی ترنمول کانگریس کے ممبر پارلیمنٹ سوگاتا رائے نے تحریک التوا کا نوٹس دیا۔رائے نے کہا کہ مرکزی حکومت نے این آر سی سے40لاکھ سے زائد لسانی و مذہبی اقلیتوں کے افراد کے ناموں کو قصداً حذف کیا ہے جس کے آسام سے متصل ریاستوں کی مردم شماری کے عمل میں پیچیدگیاں پیدا ہو جائیں گی۔

آسام کانگریس کے صدر ریپون بورا نے کہا کہ این آر سی میں40لاکھ سے زائد آسامیوں کا نام شامل نہ کرنا نہ صرف ایک بیت بڑی تعداد ہے بلکہ حیرت انگیز بھی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس حتمی مسودے میں بہت شزیادہ بدعنوانی کی گئی ہے اور بدنیتی سے کام لیا گیا ہے۔نیز اس کے پس پشت بی جے پی کا سیاسی محرک بھی کارفرما ہے۔ہم اس معاملہ کو حکومت سے اور پارلیمنٹ میں اٹھائیں گے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Assam nrc over 40 lakh not in list rajya sabha adjourned in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply