فوج پوری طاقت سے جواب دینے کے لیے تیار: نریندرمودی

نئی دہلی:ملک کو ایک بار پھر یہ یقین دلاتے ہوئے کہ اڑی میں دہشت گردانہ حملے کے ذمہ داروں کو یقیناًسزا دی جائے گی وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا ہے کہ مسلح افواج ملک کے خلاف کسی بھی نفرت آمیز کارروائی کے منصوبے کو ناکام بنانے کے لئے پوری طرح سے مستعد ہیں۔ گشتہ روز آل انڈیا ریڈیو پر اپنے ماہانہ پروگرام ”من کی بات“ کا آغاز کرتے ہوئے مسٹر نریندر مودی نے اڑی حملے میں اپنی جان گنوانے والے شہیدوں کو خراج عقیدت پیش کیا اور کہا کہ حملے کے قصور واروں کو بخشا نہیں جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ قوم کو فوج پرپورا اعتماد ہے جو پوری قوت سے جواب دینے کے لئے تیار ہے۔ مسٹر مودی نے کہا کہ ”ہمیں اپنی فوج پر فخر ہے۔
بہت سارے مواقع پر لوگ اور سیاسی لیڈران اپنی زبان سے اپنے ذہن کی باتیں کرتے ہیں لیکن فوج نہیں بولتی ہے اور اپنی کارروائی سے اپنی قوت کا اظہار کرتی ہے“۔ وزیر اعظم نے کشمیر کے حوالے سے کہا کہ وادی کشمیر میں لوگوں کو اب سچائی کا پتہ چلنے لگا ہے اور وہ امن کی راہ کی طرف گامزن ہورہے ہیں۔ مسٹر مودی نے کہا کہ کشمیر کے تمام معاملات مذاکرات کے ذریعہ طے کیے جائیں گے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ جموں کشمیر کے لوگ اب قوم مخالف طاقتوں کو پہچان گئے ہیں اور اب ان سے دوری اختیار کر کے امن کی راہ پر چل پڑے ہیں۔ اس سلسلے میں انہوں نے ایک نوجوان ہرش وردھن کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اڑی حملے سے بے چین ہوئے اس نوجوان نے روزانہ تین گھنٹے مزید مطالعہ کرنے اور اچھا شہری بننے کا عہد کیا ہے۔
مسٹر مودی نے کہا کہ ہمیں فوج پر اعتماد ہے۔ وہ اپنی صلاحیت سے ایسی ہر سازش کو ناکام کریں گے۔ انہوں نے سیکورٹی، اتحاد اور خیر سگالی کو مسائل کا حل اور ترقی کا اہم راستہ بتاتے ہوئے کہا کہ انہیں یقین ہے کہ ہر مسئلہ کا حل مل بیٹھ کرتلاش کر لیا جائے گا اور کشمیر کی آئندہ نسل کی ترقی کے لئے بھی بہترین راستے کھلیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کے شہریوں کی حفاظت حکومت کی ذمہ داری ہے۔ امن و قانون کے لیے حکومت کو چند اقدامات کرنے پڑتے ہیں لیکن سلامتی دستوں کو بھی یہ یقینی بنانا چاہیے کہ ان کی طاقت کا استعمال امن وقانون کے لئے ہو۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Army well prepared to give befitting reply in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
Tags:

Leave a Reply