سن 84کے سکھ مخالف فسادات کیس میں ایک کوپھانسی اور دوسرے کو عمر قید کی سزا

نئی دہلی:قومی دارالخلافہ میں 84کے فسادات کیس میں ،جس میں3ہزار سے زائد سکھوں کو قتل کر دیا گیا تھا ،پٹیالہ ہاؤس عدالت نے 34سال بعد ایک مجرم یشپال سنگھ کو سزائے موت اور دوسرے مجرم نرئیش شیراوت کو عمر قید کی سزا سنائی۔

ان دونوں کو یکم نومبر 1984کو جنوبی دہلی کے مہی پال پور علاقہ میں ہردیو سنگھ اور اوتار سنگھ نام کے دو سکھوں کو قتل کرنے کا مجرم پایا گیا تھا۔

واضح ہو کہ سکھوں کے قتل عام کے ہولناک واقعات کے کیس میں کے34سال بعد یہ پہلی سزائے موت ہے۔پٹیالہ ہاؤس عدالت کے باہر فیصلہ کے بعد خوشی و جذباتی منظر دیکھنے کو ملا۔

اور سکھوں کے ایک جم غفیر نے اس فیصلہ کا خیر مقدم کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ ان ہولناک وارداتوں کے اصل مجرموں سجن کمار و جگدیش ٹائٹلر کو بھی جلدہی کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Anti sikh riots death sentence for convict yashpal naresh given life imprisonment in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
What do you think? Write Your Comment