پدماوت مخالف احتجاج بھیانک تشدد و آتشزنی میں تبدیل،سڑکوں کی ناکہ بندی

نئی دہلی: متنازعہ فلم پدماوت نے سنیما گھروںکی زینت بننے سے پہلے ہی وسیع پیمانے پر کہرام مچا رکھا ہے اور باوجود اس کے کہ ایسی خبریں مل رہی ہیں کہ فلم میں ایسی کوئی قابل اعتراض یا گرفت سین یا مکالمہ نہیں ہے جس سے کسی بھی طبقہ یا برادری کے جذبات مجروح ہوتے ہیں لوگوں کا غصہ ایسا پھوٹ پڑا ہے کہ سنیما ہالوں سے لے کر سڑکوں پر ٹریفک اس کا شکار بن رہا ہے۔
تلنگانہ میں حیدرآباد کے علاوہ گجرات، ہریانہ،اترپردیش اورمدھیہ پردیش و راجستھان میں بھی مشتعل بھیڑ جگہ جگہ توڑ پھوڑ اور آتشزنی کرتی دکھائی دے رہی ہے اور اس دوران ان تمام مقامات پر جہاںجہاں احتجاج کیا جارہا ہے ایڈمنسٹریشن کوئی کارروائی نہیں کر رہا۔
دہلی جے پور شاہراہپربھی ایک بس کو نذر آتش کر دیا گیا۔لکھنؤ کے گومتی نگر کے ایک مال میں توڑ پھوڑ کی گئی۔ ہریانہ کے گوڑ گاؤں اور یوپی کے متھرا میں بھی کئی مالوں پر پتھراؤ کیا گیا اور آگ لگانے کی کوشش کی گئی۔
حالات بے قابو دیکھ کر کم و بیش تمام ڈسڑی بیوٹرز نے یہ فلم نہ دکھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ہریانہ میں تو اس فلم کا کہیں بھی کئی پوسٹر آویزاں نہیں کیاگیا۔کئی مقامات پر سیکڑوں کاریں ،بائیسکل اور دیگر گاڑیاں نذر آتش کر دی گئیں۔ احمد آبا دمیں 50افراد کی گرفتاری کی خبر ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Anti padmaavat protests turn violent mobs block roads damage vehicles in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply