پنجاب کی ایک اور خاتون سعودی کفیل کی غلامی سے نجات دلائی گئی

چنڈی گڑھ: سعودی عرب میں پنجاب کی خواتین کو غلام کے طور پر کام کرنے پر مجبورکرنے کیا یاک اور مثال اس وقت سامنے آئی جب ایک خاتون، جس نے ایک ویڈیو بھیج کر اپنی بپتا سنائی تھی کہ کس طرح اس کا کفیل اسے اذیتیں دیتا ہے،اپنے شہر واپس لوٹ آئی۔سونیا لال چند نام کی یہ خاتون 31اگست کو سعودی عرب کے شہر حفر البطان گئی تھی۔
اسکے دیور سریندر نے بتایاکہ ہندوستانی سفارت خانہ واقع ریاض نے اسے ایک پیغام بھیج کر اس کی ہند واپسی سے مطلع کیا۔ سفارت خانہ سے جاری ٹئیوٹر پیغام میں کہا گیا کہ یہ بتاتے ہوئے مسرت ہو رہی ہے کہ سونیا لال چند جس کا پاسپورٹ نمبر ایم9947610ہے 6دسمبر کوصبح دس بج کر پانچ منٹ پردمام سے آنے والی پرواز ایر انڈیا914سے دہلی پہنچ رہی ہے۔
سریندر نے بتایا کہ اس کی بھابی دہلی کی نہاں نام کی ایک ٹریول ایجنٹ کے توسط سے سعودی عرب گئی تھی۔جہاں اس کے کفیل نے نہ صرف اس سے24گھنٹے کام لینا شروع کر دیا بلکہ اس کو مارنے پیٹنے بھی لگا۔
اور جب ہم نے اس ایجنٹ سے رابطہ کیا تو اس نے ان کی کوئی مدد نہیں کی۔یہ خاتون گذشتہ تین ماہ کے دوران بمشکل تمام 6000روپے ہی اپنے گھر والوںکو بھیج سکی۔جبکہ اس سے 30ہزار روپے ماہانہ مشاہرہ دینے کا وعدہ کیاگیا تھا۔سونیا کے تینبیٹیاںہیںجن میںسے سبسے چھوٹی کی عمر 8سال ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Another woman from punjab rescued from slavery in saudi returns wedn in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply