حزب اختلاف کے غل غپاڑے کے باعث اسپیکر نے لوک سبھا کی کارروائی جمعہ تک کےلئے ملتوی کر دی

نئی دہلی:لوک سبھا میں اپوزیشن پارٹیوں کے اراکین پارلیمنٹ نے نوٹوں کی منسوخی پر بحث کرانے کے مطالبے پر آج پھر زبردست غل غپاڑہ کیا جس کی وجہ سے ایوان کی کارروائی ایک بار ملتوی کئے جانے کے بعد دن بھر کےلئے ملتوی کردی گئی۔
وقفہ سوال کے بحث میں نکل جانے کے بعد ایوان کی کارروائی 12بجے دوبارہ شروع ہوئی تو ضروری کام کاج نپٹانے کے بعد اسپیکر سمترامہاجن نے وقفہ صفر شروع کردیا۔اسی دوران اپوزیشن پارٹیوں کے کئی اراکین نوٹوں کی منسوخی پر بحث کامطالبہ کرتے ہوئے ایوان کے وسط میں جمع ہوکر نعرے بازی کرنے لگے۔
ہنگامے کے درمیان ایوان میں کانگریس کے رہنما ملک ارجن کھڑگے،راشٹریہ جنتا دل کےجے پرکاش ناراین یادو،مارکسی کمیونسٹ پارٹی کے پی کروناکرن اور ترنمول کانگریس کے رہنما سدیپ بندھوپادھیائے سمیت کئی اراکین پارلیمنٹ بولنے کےلئے اپنی سیٹوں پر کھڑے ہوگئے تو اسپیکرنے انہیں اپنی بات کہنے کی اجازت دے دی۔
مسٹر کھڑگے نے کہا کہ کانگریس کے ساتھ ہی پورا اپوزیشن ضابطہ56 کے تحت نوٹوں کی منسوخی کے سلسلے میں لوگوں کو ہورہی شدید دقتوں پر بحث کرنا چاہتا ہے لیکن حکومت اس سے بھاگ رہی ہے۔اپوزیشن اس مسئلے پر مشکل حالات میں دھکیلے گئے لوگوں کی آواز بن کر ایوان میں بحث کرانے کا مطالبہ کررہا ہے تو حکومت کو اس کےلئے تیار ہونا چاہئے۔
راشٹریہ جنتا دل کے مسٹر یادو نے کہا کہ بحث اصول 56 کے تحت ہو اور ووٹوں کی تقسیم ہونے کی صورت میں کوئی دقت نہیں ہونی چاہئے۔انہوں نے کہا کہ نوٹوں کی منسوخی کی وجہ سے غریبوں کی موت ہورہی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Another day of washout demonetisation disrupts ls in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply