حیدرآباد میں بارشوں اور آلودہ پانی سے بخار نے وبا ئی شکل اختیار کر لی

حیدرآباد:تلنگانہ کے شہر حیدرآباد میں حالیہ چند دنوں کی بارش کے سبب اچانک وبائی امراض کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوگیا ہے۔ فیور اسپتال میں روزانہ 500 تا 700مریض وبائی امراض کی علامات کے ساتھ رجوع ہورہے ہیں۔
اسپتالوں میں مریضوں کی طویل قطاریں بھی نظر آرہی ہیں۔ محکمہ صحت کے اعداد و شمار کے مطابق وبائی امراض سے ریاست بھر میں پانچ لاکھ سے زائد افرا دمتاثر ہیں۔ عام بخار سے متاثر ہونے والوں کی تعداد لاکھوں ہیں۔پینے کے پانی میں آلودگی یا استعمال کی جانے والی ناقص غذا کے سبب یہ امراض پھیلتے ہیں۔ تاہم مچھروں کی افزائش بھی ان دنوں زیادہ ہے جس کے سبب ان وبائی امراض میں اضافہ ہورہا ہے۔
ملیریا ڈینگی ‘ چکن گنیا مچھروں کے ذریعہ ہی پھیلتے ہیں۔ ریاست کے دیگر علاقوں کے مقابلہ حیدرآباد میں وبائی امراض سے متاثرہ افراد کی تعداد زیادہے۔ فیور اسپتال کے سپرنٹنڈنٹ شیکھر نے کہا کہ ڈینگی کے معاملات بھی درج کئے گئے ہیں۔ ان امراض سے شہریوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ یہ تمام معاملات انفیکشن کی وجہ سے ہوئے ہیں اور ایسے بعض واقعات ہی سامنے آئے ہیں۔
بتایا جاتا ہے کہ اس کے پھیلنے کو دیکھتے ہوئے احتیاط کا ڈاکٹرس نے مشورہ دیا ہے۔ ڈاکٹروں نے مچھر کش دواؤں کا استعمال کرنے اور کھانے پینے کی چیزوں میں احتیاط پر زور دیا ہے۔

Title: alarming rise in dengue abd seasonal ailments in hyderabad in Urdu | In Category: ہندوستان  ( india ) Urdu News

Leave a Reply