طلاق اور یکساں سول کوڈ پر سوالنامہ قومی ہم آہنگی کے خلاف:بخاری

نئی دہلی:شاہی امام مولاناسیداحمد بخاری کے نزدیک تین طلاق اور یکساں سول کوڈ کے سلسلے میں حکومت کا موقف اور لاکمیشن کا سوالنامہ ملک کی وحدت وسالمیت اور قومی ہم آہنگی سے ہم آہنگ نہیں۔ مولانا بخاری نے کہاکہ یکساں سول کوڈ کے نفاذ کا تعلق ملک کے 125کروڑ لوگوں سے ہے۔یہ صرف مسلمانوں کا نہیں تمام مذاہب کے لوگوں کا معاملہ ہے۔
اسی کے ساتھ یہ الزام لگاتے ہوئے کہ اترپردیش اسمبلی انتخابات کے پیش نظر ووٹوں کی یک قطبیتکی غرض سے حکومت یہ حربہ استعمال کر رہی ہے انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کوانتہائی سوچ سمجھ کا مظاہرہ کرنا چاہئے تاکہ وہ جھانسے میں نہ آئیں۔
امام بخاری نے کہا کہ اگرچہ آزادی کے بعد سے رونما ہونے والے ہزاروں فرقہ وارانہ فسادات ، مسلمانوں کی اقتصادی ،سماجی اورتعلیمی پسماندگی اور زبوں حالی کیلئے کسی ایک کو ذمہ دارقرارنہیں دیاجاسکتالیکن” مسلمانوں کے ساتھ ناانصافی ظلم اورزیادتیوں کے سلسلے میں نام نہاد سیکولرجماعتیں،فرقہ پرست عناصر اورحکومتیں ایک دوسرے کو مات دینے کی کوشش میں لگی رہی ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Ahmad bukhari rejects questionnaire on uniform civil code in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply