بیٹی کے ہاتھوں گھر سے نکالے گئے بوڑھے ماں باپ بس اسٹینڈ پر زندگی گذارنے پر مجبور

بنگلور: کرناٹک کے ہبلی شہر میں اس وقت ایک دلخراش واقعہ رونما ہوا جب بیٹی کے ہاتھوں گھر سے نکال دیے جانے والے بوڑھے والدین ایک بس اسٹینڈ کے شیڈ کے نیچے پناہ لینے پر مجبور ہو گئے۔
موصول اطلاع کے مطابق 90سالہ سوریہ کانت اوران کی بیوی 80سالہ کمالما لکشمیشور کے رہائشی ہیں اور ان کے ایک بیٹی ہے۔ ہبلی آکر کچھ روز انہوں نے ایک مندر میںکام کیا اور پھر اس کے بعد وہ اپنی بیٹی کے گھر منتقل ہو گئے۔
کچھ روز تک تو بیٹی نے برداشت کیا اور پھر انہیں گھر سے نکال دیا ۔کوئی دوسرا سہارا نہ ہونے کے باعث وہ ایک قریبی ضعیف خانہ گئے لیکن کسی قسم کا شناختی کارڈنہ ہونے کے باعث انہیں وہاں بھی جگہ نہ مل سکی تب وہ ایک بس اسٹینڈ پہنچے اور وہیں ایک گوشہ میں پڑ گئے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Aged couple forced to stay at bus stand after daughter throws them out in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply