مودی ۔شی ملاقات کے بعد جنرل راوت چین کی سرحد کو پرسکون رکھنے کے لیے قومی سلامتی مشیر سے تبادلہ خیال کریں گے

نئی دہلی: گذشتہ ہفتہ چین کے شہر ووہان میں وزیر اعظم نریندر مودی اور چینی صدر شی جن پینگ کے درمیان غیر رسمی سربراہ ملاقات کے دوران لیے گئے اہم فیصلوں میںسے ایک پر فوری عمل کرنے کے لیے فوجی سربراہ جنرل بپن راوت اسی ہفتہ کسی وقت قومی سلامتی مشیر اجیت دووال سے ملاقات کر کے چین کے ساتھ3488کلومیٹر لمبی حقیقی کنٹرول لائن پر کوئی بھی نا خوشگوار واقعہ رونما نہ ہونے دینے کے لیے فوجی اقدامات پر تبادلہ خیال کریں گے۔اس معاملہ سے ،تعلق افسران نے ،اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ اس کا مطلب کم جارحانہ گشت ہے تاہم اس میں حفاظتی دستہ کی تعداد میں کوئی کمی نہیں کی جائےگی۔ ایسا ہی اقدام چینی فوج کی جانب سے کیا جانا متوقع ہے۔ یہ اقدام ووہان سربراہ اجلاس کی کامیابی کے بعد کیا گیا ہے ۔ اس اجلاس میں وزیر اعظم نریندر مودی اور چین کے صدر شی جن پینگ نے اپنی فوجوں کو باہمی اعتماد سازی اور آپسی مفاہمت کے لیے اسٹریٹجک رہنمائی کی ہے۔ متعلقہ افسران نے مزید بتایا کہ جنرل راوت نے چین کے ساتھ سرحد کو پر سکون رکھنے کے لیے راہیں تلاش کرنے کے لیے اپنے کور کمانڈروں سے غیر رسمی تبادلہ خیال کیا۔ چین کی پیپلز لبریشن آرمی کےساتھمساوی فوجی نفری کی بنیاد پر موجودہ اعتماد سازی اقدامات پر مزید کام کرنے اور اس کو اور تقویت پہنچانے کے لیے خصوصی اقدامات پر فوجی سربراہ اس ہفتہ مسڑ دووال سے ملاقات کریں گے جس کے بعد فوجی سربراہ اور وزیر اعظم کے درمیان ملاقات ہو سکتی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: After modi xi summit army chief nsa to discuss military measures to keep lac incident free in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply