ایڈوکیٹ شاہد اعظمی قتل کیس کے 4ملزموں کے خلاف الزامات طے

ممبئی:دہشت گردانہ معاملات میں گرفتار مسلم نوجوانو ں کے مقدمات کی پیروی کرنے والے مشہور کرمنل وکیل شاہد اعظمی قتل معاملے میں چار ملزمین کے خلاف بالآخر آج سات برسوں کے طویل انتظار کے بعد فرد جرم عائد کردی گئی۔ عدالت نے ملزمین کے خلاف قتل، مجرمانہ سازش، آرمس ایکٹ اور تعزیرات ہند کی دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا ہے۔
ایڈوکیٹ شاہد اعظمی کو11 فروری2011کو ان کے دفتر واقع ٹیکسی مین کالونی کرلا ممبئی میں چند نا معلوم افراد نے گولیوں سے بھون دیا تھا جس کے بعد عوام کے شدید احتجاج اور حقوق انسانی کے لیئے کام کرنے والی تنظیموں کے مطالبہ پر پولس نے معاملے کی تحقیقات شروع کرکے چا ر ملزمین کو گرفتار کیا تھا۔
موصولہ اطلاعات کے مطابق ممبئی کی سیشن عدالت نے آج ملزمین دیوندر جگتاپ، پنٹودگاڑے، دنود وچارے اور ہنس مکھ سولنکی کے خلاف فرد جرم عائد کرکے مقدمہ کی سماعت باقاعدہ شروع کیئے جانے کے احکامات جاری کیئے۔ اس معاملے میں گرفتار دو ملزمین پنٹو دگاڑے اور ونود وچارے ضمانت پر ہیں وہیں دیگر دو ملزمین کو سیشن عدالت نے ضمانت پر رہا کرنے سے انکار کردیا تھا ۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Advocate shahid azmi murder case charges framed against four accused in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply