ہریانہ کے ایک کنبہ نے صدر جمہوریہ سے مرضی سے مرنے کی اجازت مانگی

نئی دہلی:ہریانہ کے ضلع جیند میں سفیدو گاؤں کے وارڈ نمبر 9 سے ایک خاندان نے پولس پر اپنے خلاف جھوٹا مقدمہ درج کرنے کا الزام لگاتے ہوئے صدر جمہوریہ سے مرضی کی موت کی فریاد کی ہے۔
خاندان کے سرپرست ستپال دھون نے صدر جمہوریہ کو لکھے گئے خط میں پولس ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ(ڈی ایس پی) ہریندر کمار پر اپنے خاندان کے خلاف جھوٹا مقدمہ درج کرنے کے الزام لگایا ہے اور مرضی کی موت کی اجازت دینے کی درخواست کی ہے۔
دھون نے اپنی شکایت میں لکھا ہے کہ اس معاملے کی وجہ سے وہ، ان کی بیوی انیتا اور نابینا بیٹا روہت کو معاشی، ذہنی اور جسمانی تشدد کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور اس معاملے کی وجہ سے پورا خاندان پریشان ہے۔
ان کا کہنا ہے کہ آج تک ان کے خاندان کے خلاف پولس میں کوئی مقدمہ درج نہیں ہے۔دوسری جانب ڈی ایس پی نے واضح کیا کہ دو فریقوں کے درمیان جھگڑا ہوا تھا جس پر ان دونوں کے خلاف معاملے درج کئے گئے ہیں۔ صدر جمہوریہ کو خط لکھنا ایک طرح سے دباؤ بنانے کی کوشش ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: A haryana family seek presidents permission to commit suicide in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply