چاروں ناراض ججوں سے ملاقات کے بعد متنازعہ امورطے پا گئے:اٹارنی جنرل

نئی دہلی :سپریم کورٹ کے چیف جسٹس دیپک مشراکے خلاف چارسینئرججوں کے ذریعہ لگائے گئے الزامات سے پیداہوئے تنازعہ کو حل کرنے اور مصالحت کے لیے مساعی کے جزو کے طور پر اٹارنی جنرل کے کے وینو گوپال نے پیر کی صبح ان چاروں ججوں سے باقاعدہ ملاقات کرنے کے بعد کہا کہ متنازعہ امور طے پا گئے ہیں ۔
اور جلد ہی صورت حال معمول پر آجائے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ عدالت عظمیٰ میں کام کاج حسب معمول چل رہا ہے۔ تاہم چیف جسٹس آف انڈیا دیپک مشرا نے جسٹس چیلا میشور، جسٹس رنجن گوگوئی، جسٹس مدان لوکر اور جسٹس کیورین جوزف سے ہنوز ملاقات نہیں کی۔
اس سے قبل اتوار کو بار کونسل کے ایک وفد نے اتوار کو جسٹس جے چلمیشورسے ملاقات کی۔وفد کے قائدبار کونسل آف انڈیا کے صدر منن کمار مشرانے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہاتھاکہ وفد ناراض ججوں سے علیحدہ ملاقات کر کے مصالحت و مفاہمت کی راہ تلاش کرے گا۔بعدازاں وفد چیف جسٹس آف انڈیا دیپک مشرا سے بھی ملاقات کرے گا۔
مسٹر منن مشرا نے کہا کہ مصالحت کی کوششوں کے جزو کے طور پر تحت وفد نے سب سے پہلے سینئرترین جج جے چلمیشور سے ملاقات کی۔اور پھر تمام ججوں سے ملاقات کے بعد سؒھ کرانے کی مساعی کا جو بھی نتیجہ سامنے آئے گا اسے میڈیا کے علم میں لایا جائے گا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: A g says everything has been settled now in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
Tags: , ,

Leave a Reply