اقلیتوں کی تعلیم سے متعلق سبھی مسائل جلد حل کیے جائیں گے: ستیہ پال سنگھ

نئی دہلی: وقت کے ساتھ ساتھ تعلیم کا نظام تبدیل ہوا ہے، ہمیں آج خود کو موجودہ حالات سے ہم آہنگ کرنا ضروری ہے۔ عصری تعلیم و تربیت میں کمپیوٹر کی تعلیم آج ناگزیر ہوگئی ہے۔ آج ملک کو سب سے زیادہ تعلیم کی ضرورت ہے۔ تعلیم سے ہی ملک کی ترقی ممکن ہے۔ تعلیم کے معیار کو ہم بہتر بنانے کی کوشش کررہے ہیں۔

یہ باتیں آج مرکزی وزیر مملکت برائے فروغ انسانی وسائل ڈاکٹر ستیہ پال سنگھ نے اقلیتوں کی تعلیم و تربیت کے لیے بنائی گئی نیشنل مانیٹرنگ کمیٹی کی میٹنگ میں کہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ سرکار اِس بات پر زور دے رہی ہے کہ پڑھنے والاہر بچہ اسکولی تعلیم حاصل کرے۔ اقلیتوں پر ہماری خصوصی توجہ ہے کہ اقلیتی طبقے کا کوئی بھی بچہ اسکول کی تعلیم سے دور نہ رہے اور ہر قیمت پر اُسے اسکولی تعلیم مہیا کرائی جائے۔ ہماری سرکار اقلیتوں کی تعلیم سے متعلق تمام مسائل جلد حل کرنے کی کوشش کررہی ہے۔

اس میٹنگ میں ملک کے مختلف حصوں سے آئے ہوئے مانیٹرنگ کمیٹی کے نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے وزارت برائے فروغ انسانی وسائل کی سکریٹری محترمہ رینا رے نے رائٹ ٹو ایجوکیشن اور اسکولی تعلیم پر گفتگو کی۔ انھوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں بنیادی تعلیم میں بہتری آئی ہے اور ملک میں 97فیصد بچے اسکول میں داخلہ لے چکے ہیں۔ لڑکیوں کی تعلیم میں تھوڑا چیلنج ہے لیکن اس سمت میں بھی ہم کوشش کررہے ہیں۔ ہم آپ سب کے مشوروں کا استقبال کرتے ہیں ا ور آپ کی رائے کی روشنی میں مزید بہتر کرنے کی کوشش کریں گے۔

وزارت برائے فروغ انسانی وسائل کے جوائنٹ سکریٹری مدھوررنجن کمار نے افتتاحی کلمات ادا کرتے ہوئے کہا کہ آج ہم یہاں ملک کی اقلیتوں کی تعلیم سے متعلق غور و خوض کرنے کے لیے جمع ہوئے ہیں۔انھوں نے اقلیتوں کی تعلیم سے متعلق ایک پاور پوائنٹ پریزینٹیشن پیش کیا اور ملک میں اقلیتوں کی تعلیمی صورتِ حال پر روشنی ڈالی۔ ساتھ ہی حکومت کے ذریعہ چلائی جارہی مختلف اسکیموں کے بارے میں بھی بتایا۔

قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کے ڈائرکٹر پروفیسر ارتضیٰ کریم نے قومی اردو کونسل کی حصولیابیوں اور کارکردگیوں کا جائزہ پیش کیا۔ ساتھ ہی کونسل کے ذریعہ آغاز کیے گئے ای پب ایپ کا تعارف بھی کرایا۔اس میٹنگ میںمسلم بچوں کی تعلیم، مدرسہ ایجوکیشن، مدرسہ بورڈ، اردو میڈیم اسکول ، تکنیکی تعلیم،مدارس کے اساتذہ کی تنخواہوں کے مسائل پر گفتگو کی گئی۔ ساتھ ہی پنجابی ، بدھ اور جین جیسی اقلیتوں کی تعلیمی ترقی پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

وگیان بھون، نئی دہلی میں منعقدہ اس میٹنگ میں تعلیم و تربیت سے وابستہ مختلف ماہرین نے شرکت کی اور اپنے قیمتی مشورے دیے۔ وزیرمملکت برائے فروغ انسانی وسائل جناب ستیہ پال سنگھ نے سبھی مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ اقلیتوں کی تعلیم سے متعلق سبھی مسائل جلد حل کیے جائیں گے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: %c2%81 minority education problems and solutions in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply