دہی کے استعمال سے آنتوں کی سوزش کم کی جاسکتی ہے

نئی دہلی: ایک تحقیق کے مطابق دہی کا استعمال آنتوں کی پرت میں سدھار کر کے سوزش کو کم کر سکتا ہے۔ یہ انڈوٹاکسنس کو روکنے میں مدد گار ہوتا ہے، جو کہ سوزش سے وابستہ مالیکیول کو بڑھانے سے روکتا ہے۔

روز انہ دہی کھانے سے دائمی سوزش میں آرام ملتا ہے اس کے ساتھ ہی یہ آنتوں کے عارضہ، گٹھیا اور استھما جیسی بیماری کے فیکٹر کو کم کرتا ہے۔ امریکہ میں وسکانسن۔ میڈیسن یونیورسٹی کے ایک اسسٹنٹ پروفیسر بریڈ بولنگ نے جسم کے نظام پر دہی کے اثرات کی تحقیق کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایسپرین ، نیپروکسن ہائیڈروکورٹیسون اور پریڈیسن جیسی انٹی ۔ انفلی میٹری دواؤں کی مدد سے سوزش کے اثرات کو کم کیا جا سکتا ہے۔ لیکن اس کے کچھ برعکس نتیجہ ہو سکتے ہیں۔ محققین نے 120 خواتین پر تحقیق کیا ، اس میں سے کچھ جسمانی طور سے موٹی و پتلی عورتوں کو شامل کیا ۔

انہوں9ہفتے کے لئے روزانہ 12ونس کم وسا والی دہی کھانے کو دی گئی ۔ بنا دودھ والے ڈائیزرٹ کھانے کو دیئے گئے۔ انہوںنے خون کی جانچ کر سوزش کا پتہ لگایا جس کے نتیجہ میں پایا گیا کہ مسلسل دہی کے استعمال سے انٹی ۔انفلی میٹری میں بدلاؤ دیکھا گیا۔ یہ تحقیق جرنل آف نیوٹریشن نام کے رسالے میں شائع ہوئی ہے۔

Read all Latest health news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from health and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Eating yogurt may help reduce chronic inflammation in women in Urdu | In Category: صحت Health Urdu News

Leave a Reply