کمپیوٹر کا استعمال اور آنکھوں کی حفاظت

موجودہ دور میں کمپیوٹر ہماری زندگیوں میں ایسے شامل ہے جیسے کھانا پینا، یا شاید یہ کہنا بھی غلط نہ ہوگا کہ جس طرح ہم کھائے پیئے بغیر نہیں رہ سکتے بالکل ویسے ہی اب کمپیوٹر کے بغیر زندگی ادھوری لگتی ہے۔ بچے ہوں یا بڑے سب ہی اس کے عادی ہیں ، کمپیوٹر کا استعمال ہماری زندگیوں میں مسلسل بڑھ رہا ہے چاہے اسکول ہوں یا دفاتر، اسپتال ہوں یا ایئرپورٹ غرض ہر جگہ کمپیوٹر کا راج ہے۔ کمپیوٹر نے جہاں ہماری زندگی آسان بنائی ہے وہیں اس کے بے جا استعمال نے ہماری آنکھوں کو کمزور کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی ہے، آنکھوں سے متعلقہ مسائل بنیادی ہیں لیکن کمپیوٹر کے استعمال سے اس میں مزید اضافہ ہوتا ہے۔
ہم اپنے بچپن سے ایک جملہ سنتے آئے ہیں کہ ٹی وی قریب سے نہ دیکھو ورنہ آنکھیں خراب ہو جائیں گی، بالکل ایساہی کمپیوٹر کے ساتھ بھی ہے ۔ جب آپ کچھ گھنٹے مستقل کمپیوٹر کے سامنے بیٹھے ہوں گے تو آپ خود محسوس کرتے ہوں گے کہ آپکی آنکھیں تھکن کاشکار ہو رہی ہیں ۔ بہت سے لوگوں کی انکھوں میں تو سرخی تک نمودار ہو جاتی ہے۔اس کے علاوہ سردرد، تھکن ، آنکھوں پر دباو¿ ، دھند لا پن ، نظر کی کمزوری ، پر دچشم کا خشک ہو جانا اور کندھے اور گردن کا درد، حقیقت یہی ہے کہ اگر اپ احتیاط نہ کریں تو کمپیوٹر کا مستقل استعمال آپ کی آنکھوں پر انتہائی منفی اثرات مرتب کر سکتا ہے۔ کمپیوٹر آج کے دور کی ضرورت ہے لیکن اس کے استعمال میں اگر آپ احتیاط برتیں تو نہایت خوش اسلوبی سے آپ اپنی آنکھوں کو نقصان پہنچائے بغیر اپنے تمام کام انجام دے سکتے ہیں۔
اس سلسلے میں کچھ احتیاطی تدبیر ہیں جن پر عمل پیرا ہو کر آپ مذکورہ تکالیف سے چھٹکارا حاصل کر سکتے ہیں اس سے نہ صرف آپ اپنی بینائی محفوظ رکھ سکتے ہیں بلکہ آپ کو جسمانی پریشانیوں کا سامنا بھی نہیں کرنا پڑے گا۔
کمپیوٹر کی اسکرین کا رخ مناسب جگہ پر رکھیں ، سکرین سے بیس سے اٹھائیس انچ کے فاصلے پر رہیں۔ اونچی کر سی کا استعمال کریںتاکہ اسکرین کا اوپری کنارہ آپ کی آنکھوں کی سطح پر ہو۔
کمپیوٹر کی اسکرین پا بندی سے صاف کریں تاکہ اسکرین پر جمی دھول آپ کی آنکھوں میں جلن پیدا نہ کر سکے۔
کمپیوٹر کی اسکرین اور روشنی میں توازن رکھنے کی کوشش کریں۔ کمرے میں روشنی کچھ اس انداز سے رکھیں کہ اس کا عکس اسکرین پر براہ راست نہ پڑے۔ ورنہ یہ آپ کی آنکھوں پر اثر انداز ہو کر انہیں کمزور کر دے گی۔ کھڑکی اور دروازے سے آنے والی روشنی کا بھی خیال رکھیں۔ پردوں کے ذریعے باہر سے آنے والی روشنی کو کنٹرول کیا جا سکتا ہے۔
آنکھوں کو پرنم رکھنے کے لئے اپنے ڈاکٹر سے بات کر کے آنکھوں کی صفائی اور کثافت دور کرنے کے لئے ڈراپ لے لیں تاکہ آپ کو ٹھنڈک کا احساس ہو۔
کام کے دوران وقفہ ضرور لیں ۔اپنی آنکھیں بند کر کے ریلیکس ہو جائیں یا پھر دوردکھی کسی چیز پر کچھ دیراپنی توجہ مرکوز کریں۔ اگر آپ تھوڑی دیر کے لئے باہر جا سکتے ہیں یا کوئی دوسرا کا م کر سکیں ، جس کے لئے آپ کو کمپیوٹر کی اسکرین کا سامنا نہ کرنا پڑے، تو بہتر ہوگا۔
جہاں آپ بیٹھیں وہاں کرسی کے پیچھے بلب لگانا مناسب ہے تاکہ بلب کی روشنی اسکرین پر پڑے ناکہ آپ کی آنکھوں پر۔
اگر آپ کے کمپیوٹر پر حفاظتی اسکرین نہیں لگی تو لگوالیں ورنہ اسکرین سے نکلنے والی تیز روشنی آنکھوں کو مستقل نقصان پہنچاتی رہے گی۔
وقفے وقفے سے پلکیں تیزی سے جھپکاتے رہیں ۔ جب آپ مستقل اسکرین کی طرف دیکھتے ہیں اور پلکیں نہیں جھپکاتے تو پردچشم خشک ہو جاتا ہے اس سے بینائی متاثر ہو سکتی ہے۔جب پردئہ چشم خشک ہو جاتا ہے تو آنکھوں میں سرخی آجاتی ہے اور چبھن اور جلن بھی پیدا ہو جاتی ہے۔

Read all Latest health news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from health and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Advantages and disadvantages of computers in Urdu | In Category: صحت Health Urdu News

Leave a Reply