مزاحیہ نظم :فیس بک کی یہ نرالی سی کہانی

فیس بک کی یہ نرالی سی کہانی سن لو
کیسے گزری ہے میری جاتی جوانی سن لو

داستان قیس یہ سنتا ہے تو ہل جاتا ہے
نیٹ پہ ہر روز نیا لوو مجھے مل جاتا ہے۔

ہے میرا یار بھی کس کام کے چکر میں پڑا
پی سی پہ ایک موبائل پہ ہے ایک دوجی سے لگا

کر کے ہمت ذرا کچھ آج تجھے میٹ کروں
ایک ان باکس کروں دوسرا یہ ٹوئٹ کروں

مدتوں بعد وہ آن لائن آئی ہے یاروں کروکچھ رحم
جائے لائٹ نہ ابھی واپڈاا والوں کرو کچھ رحم

دل کی نیت کو ذرا صاف بتا دیتے ہیں
یہ ایموزی مجھے پیٹنے سے بچا لیتے ہیں

پہلے تو جھگڑے ہی جھگڑے میں سب انکوڈ ہوا
اتنے میں اک نیا اسٹیٹس تیرا اپ لوڈ ہوا

فیس بک پر بھی میری جان خرابی ہے تو
تجھ کو معلوم نہیں کتنوں کی بھابھی ہے تو

کیسے بتلاو¿ں کہ ہاں مجھ پے ہی مرتی ہے وہ
ڈی پی پر میری کمینٹ نہیں کرتی ہے وہ

پہلے تو آف وہ رہ کر مجھے تڑپاتی ہے
پھر میسنجر پہ مجھے ویڈیو کال آتی ہے

فرینڈ کی لسٹ میں میں بھی ذرا مشہور دکھوں
تجھ کو بھی ایڈ سہیلی بھی تیری ایڈ کروں

فیس بک پریوں محبت کا میری ہوتا ہے ٹسٹ
آف دکھ جائے تو بھیجوں کسی دوجی کو ریکویسٹ

سو رہا تھا تیرا میسیج نہیں دیکھا میں نے
سین تو کر لیا پر نیند میں کھولا میں نے

آن نوڈو مینٹ نہ آیا تو کہا آف رہو
پاس ورڈ س اپنا مجھے دو ابھی سوری نہ کہو

صبح کالج کے لئے لیٹ بھی کرواتی ہے
رات کے ڈھائی بجے چیٹ پے آ جاتی ہے

تیرے ان باکس پے ہوتی کوئی دستک ہے نا بیل
تو کہ ، یو کے میں ہے بیٹھی میری نیٹ پی ٹی سی ایل

حمزہ

Read all Latest ghazal poetry news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from ghazal poetry and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: humorous poem in Urdu | In Category: غزلیں و شاعری  ( ghazal-poetry ) Urdu News
Tags: ,

Leave a Reply