غزل:جب آئینہ کوئی دیکھو اک اجنبی دیکھو

جاوید اختر

جب آئینہ کوئی دیکھو اک اجنبی دیکھو
کہاں پہ لائی ہے تم کو یہ زندگی دیکھو

محبتوں میں کہاں اپنے واسطے فرصت
جسے بھی چاہے وہ چاہے مری خوشی دیکھو

جو ہو سکے تو زیادہ ہی چاہنا مجھ کو
کبھی جو میری محبت میں کچھ کمی دیکھو

جو دور جائے تو غم ہے جو پاس آئے تو درد
نہ جانے کیا ہے وہ کمبخت آدمی دیکھو

اجالا تو نہیں کہہ سکتے اس کو ہم لیکن
ذرا سی کم تو ہوئی ہے یہ تیرگی دیکھو

Read all Latest ghazal poetry in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from ghazal poetry and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Ghazal javed akhtar in Urdu | In Category: غزلیں و شاعری Ghazal poetry Urdu

Leave a Reply