غزل:

 الیزبتھ کرین’مونا‘

ہم کو راس آئینہیں، چین کی کوئی ڈگر
ٹھوکریں کھاتے ہوئے، ہم تو بھٹکے در بدر

کچھ کہا ہوتا اگر، ہم بھی ان سے روٹھ کر
درمیاں رہ جاتے تھے فاصلے بھی عمر بھر

چارہ گر قاتل بنے، ہم نے یہ سوچا نہ تھا
ہو گیے تھے مطمئن، ان کی باتیں مان کر

ہاتھ میں پتھر لئے گھومتے ہیں حادثے
شیشہ دل کے لئے ہے پریشاں شیشہ گر

سیکھ “مونا” تیرنا، زیست کے دریا میں اب
پار نکلو گی نہیں کوئی تنکا تھام کر

Read all Latest ghazal poetry in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from ghazal poetry and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Ghazal hum ko raas aayi nahi chain ki koi dagar in Urdu | In Category: غزلیں و شاعری Ghazal poetry Urdu
What do you think? Write Your Comment